سوموار, اپریل 01, 2013

Kuch Log







کچھ لوگ گھروں کی طرح ہوتے ہیں وہ چاہے ہم سے کتنی بھی دور کیوں نہ ہوں، دل ان کی روح میں سمٹ جانے کے لیے بے چین رہتا ہے۔

کچھ لوگ گلابوں کی طرح ہوتے ہیں، ان کا نام لیتے ہی ہمارے اردگرد خوشبو پھیل جاتی ہے۔

کچھ لوگ ستاروں کی طرح ہوتے ہیں جو دور سے چمکتے ہیں، مگر ہمارے ہاتھ نہیں آتے۔

کچھ لوگ گھٹاؤں کی طرح ہوتے ہیں، جو دوسروں پر اس طرح برستے ہیں کہ زندگی کی سخت دھوپ نرم چھاؤں میں بدل جاتی ہے۔

کچھ لوگ خطوں کی طرح ہوتے ہیں، جنہیں بار بار پڑھنے کو جی چاہتا ہے۔ مگر بار بار پڑھ کربھی دل نہیں بھرتا۔

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں