اشاعتیں

2012 سے پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

Barasti boondon main

تصویر
kabhi rangoon ki kehkashaan mein
kabhi baharoon kai mausam mein
mujhe barish bulati hai
yehi har pal sunati hai
kisi nai yaad kiya tum ko
koi har pal bulata hai
hawa ki har ek shokhi mein
us ki batoon ki shararat hai
naram boondoon ki sangat mein
us ki chahat ki ahat hai
mujhse har pal har lamha ye
haseen mausam yeh kehta hai
barasti boodoon mein dekho
woh tumharay sath rehta hai

Qarar-e-Jaan Bhi Tumhi

تصویر
قرارِ جاں بھی تمھی، اضطرابِ جاں بھی تمھی
مرا یقیں بھی تمھی ہو، مِرا گماں بھی تمھی

یہ کیا طِلسم ہے، دریا میں بن کے عکسِ قمر
رُکے ہوئے بھی تمھی ہو، رواں دواں بھی تمھی

خدا کا شکر، مرا راستہ معیّن ہے
کہ کارواں بھی تمھی، میرِ کارواں بھی تمھی

تمھی ہو جس سے ملی مجھ کو شانِ استغنا
کہ میرا غم بھی تمھی، غم کے رازداں بھی تمھی

نہاں ہو ذہن میں وجدان کا دُھواں بن کر
افق پہ منزلِ ادراک کا نشاں بھی تمھی

تمام حُسنِ عمل ہوں، تمام حُسنِ بیاں
کہ میرا دل بھی تمھی ہو، مرِی زباں بھی تمھی ۔

Zaroorat (My Own)

تصویر
Meri Aik Kaawish 14 August Ke Hawaley se

Hawala (azadi)

تصویر
Muhabat or kahaani mai koi rishta nhi hota Magar meri Muhabat to.. kahani he kahani hai Muhabat ki kahani hai Koi raja na raani hai Na shehzada shehzadi hai.. muhabat ki kahani to Musaafat he Musaafat hai Muhabat ki Musafat or Zarort ki musafat mai Musaafir waapsi k saary imkaan paas rakhta hai Muhabat ki Musafat mai Musaafir k palatne ka koi rasta nhe hota wo saari kashtiyan apni Jala dete hain sahil par K na-umeed hone par palatna bhi agar chahen ot wapis ja nhe payen.. waheen garqaab ho jain Muhabat ki kahani mai Musafat ki basharat thi.. Musafat tey howi to phr.. jala daali thi mai ne bhi waheen sab kashtiyan apni.. Jahaan pehla parao tha shikasta jism tha mera mere seeney mai ghao tha.. bharakta ik alaaow tha kesi ki chah mai sab kuch luta kr aagaya tha mai kahan par agaya tha mai? jahaan pehchaan ka apni hawaala he na milta tha hawaadas k thapeero se sanbhala he na milta tha shab-e-tera se nikla tha ujaalo ki tamanna mai Magar mujh ko kisi janib ujaala he na milta tha magar himmat nhe haari yahan tak aagaya hun mai.. …

Chalo Ik Nazm

تصویر
چلو ا ک نظم لکھتا ہو ں میں۔۔۔۔۔
کومل سی کہ جیسے تم۔۔۔۔۔
چمکتی ا س قد ر ر و شن۔۔۔۔
کہ شب کے ختم ہو نے پر د ر خشا ں صُبح ملے جیسے۔۔۔۔۔۔
مہکتی فصل گُل میں۔۔۔۔
جس طر ح با د صبا جھو مے۔۔۔۔۔
لچکتی شا خ گُل جیسے۔۔۔۔۔
د کھا تی نا ز جیسے تم۔۔۔۔۔۔
ستا ر و ں کی طر ح جھلمل۔۔۔۔۔
شب تا ر یک میں روشن۔۔۔۔۔۔
کبھی پت جھڑ کے مو سم کی طرح۔۔۔۔۔۔
خا مو ش ا و ر گُم سُم۔۔۔۔۔
کبھی بر سا ت کی ر م جھم۔۔۔۔۔۔۔

چلو ا ک نظم لکھتا ہو ں۔۔۔۔۔
کہ جس میں ہو جما ل یار کا پر تو۔۔۔۔۔۔
جو شیر یں ہو شہد جیسی۔۔۔۔۔۔
نز ا کت میں ہو با لکل کامنی تیر ے بد ن جیسی۔۔۔۔۔۔۔۔
ہو ں جس کے نین متو ا لے۔۔۔۔۔۔
بھڑ کتے ہو ں د یئے جیسے۔۔۔۔۔۔
ہو جس کی چا ل مستا نی۔۔۔۔۔۔
کہ د ر یا کھا ئے بل جیسے۔۔۔۔۔
ہو ا یسی نظم جس کو۔۔۔۔۔۔
جو پڑ ھے و ہ گُنگنا اُ ٹھے۔۔۔۔۔۔
لگے یو ں ر قص میں ہو۔۔۔۔۔۔۔

نظم یا پھر تم ۔۔۔۔۔۔۔

میں ا یسے و جد کے عا لم میں کھو جا و ں۔۔۔۔۔۔۔
کہ لکھوں نظم ا و ر تم ۔۔۔۔۔۔۔۔

نظم میں ڈ ھلتی چلی آو۔.....♠
*****اب کہاں تیری ضرورت ہے ******

ضرورت اور تمنا میں بہت سے فرق ہوتے ہیں

ضرورت کی یہی تفہیم کافی ہے

کہ یہ ایسی طلب ہے جو نہ پوری ہو

تو کوئی جی نہیں سکتا

تمنا اس کو کہتے ہیں کہ مٹ جایے

تو جینا چاہنا ممکن نہیں رہتا

ضرورت قادر مطلق نے اپنے دست قدرت سے

ہمیں مجبور رکھنے کو ہماری ذات میں رکھی

تمنا اختیار آدمی کہیے

جسے انسان کی اپنی رضا ایجاد کرتی ہے

ضرورت خواہ کسی ہو

مگر اس کے لئے" تعیّن " شرط لازم ہے

تمنا کی وضاحت ہو نہیں سکتی

حدیث آرزو کی ساری تفسیریں ادھوری ہیں

ضرورت شکل رکھتی ہے

تمنا کی بھلا کب کوئی صورت ہے

تو اے جان تمنا ، اب کہاں تیری ضرورت ہے
تصویر
دو بھید بھری آنکھیں
اک خواب کی چلمن سے، ہر رات مجھے دیکھیں
دو بھید بھری آنکھیں
ہر صبح کو چڑیوں کی چہکار میں ڈھل جائیں
پھولوں کی قبا پہنیں
شبنم میں بدل جائیں
ہر شام ہوائوں سے احوال میرا پوچھیں
دو بھید بھری آنکھیں
کرتی ہیں عجب باتیں، کاجل کی زباں سے یہ
دل لیتی چلی جائیں، انداز بیاں سے یہ
دو بھید بھری آنکھیں
اک خواب کی چلمن سے ہر رات مجھے دیکھیں
دو بھید بھری آنکھیں

امجد اسلام امجد
تصویر
تمہیں جاناں اجازت ہے، کوئی بھی راستہ چُن لو
ہمارے مُنتظر ٹھہرو یا ہم کو الوداع کہہ دو
تمہیں جاناں اجازت ہے
ہمارے پائوں میں تو وقت کی زنجیر لپٹی ہے
قبل اس کے کہ تھک جائو، ہمارے ساتھ چل کے تم
محبت کی تھکاوٹ تم کو ہم سے بد گماں کردے
قبل اس کے کہ ہر اک واپسی کی راہ کھو جائے
جو سوچا بھی نہیں ہم نے، وہی کل کو جو ہوجائے
تمہیں جاناں اجازت ہے، کوئی بھی راستہ چُن لو
ہمارے مُنتظر ٹھہرو یا ہم کو الوداع کہہ دو
ہمارا تم سے وعدہ ہے ، تمہاری یاد کو ہم تو
سدا دل کے دریچے میں یونہی آباد رکھیں گے
تمہیں ہم یاد رکھیں گے
تمہیں جاناں اجازت ہے
تم اپنے حوصلے میں جب تھکاوٹ سی کبھی پائو
کسی پیارے سے مُکھڑے کی حسیں آنکھوں میں کھو جائو
اجازت ہے تمہیں جاناں، اگر اُس پل جو تم چاہو
کوئی بھی فیصلہ کرلو
ہمارے مُنتظر ٹھہرو یا ہم کو الوداع کہہ دو

( نازیہ کنول نازی )
تصویر
اے میرے کبریا
اے انوکھے سخی
اے میرے کبریا
میرے ادراک کی سرحدوں سے پرے
میرے وجدان کی سلطنت سے ادھر
تیری پہچان کا اولیں مرحلہ
میری مٹی کے سب ذائقوں سے جدا
تیری چاہت کی خوشبو کا پہلا سفر
میری منزل??
تیری رہگزر کی خبر
میرا حاصل?
تیری آگہی کی عطا
میری لفظوں کی سانسیں
تیرا معجزہ
میرے حرفوں کی نبضیں
تیرے لُطف کا بیکراں سلسلہ
میرے اشکوں کی چاندی
تیرا آئینہ
میری سوچوں کی سطریں
تیری جستجو کی مسافت میں گُم راستوں کا پتا
میں مسافر تیرا (خود سے نا آشنا)
ظُلمت ذات کے جنگلوں میں گھرا
میں مسافر تیرا

محسن نقوي
تصویر
Sunno!.....
Eik Baat Kehni Thi.....
Zara Tum Dehaan Se Dekho.....
Meri Bekhuwab Ankhon Mein.....
Tumhara Khuwab Sota Hai.....
Mujhay Bedaar Mat Karna....
Ussay Tabeer Honay Tak......
Bohat ajeeb hen yeh bandishen Muhabbat ki
Na us ne qaid me rakha na hum farar huway
****************************
Aa jaye Mera Naam Tere Naam Ke Hamraah Ho Jaye Kisi Roz To Pehchan Mukammal
************************
Hazaron Chaand Utarne Lagey Tasawwur Main Tera Khayal To Tujh Se Bhi Khoobsurat Hai
****************************
Anaa parast to ham bhi ghazab kay hain lekin...!!
Tere ghur0or ka bas ehtraam karte hain...!!
************************
Kitni Masoom Si Tamanna Hai...
Nam Apna Teri Awaaz Se Suno'on...
***************************
Jahan Tum Ho Wahan Saya Hai Mera
Jahan Main Hoon Wahan Saaya Nahi Hai

***************************
تصویر
Ab Ke Tamam Shehar Main Elaan Ho Gaya,
Ek Shaks Meri Zaat Ki Pehchan Ho Gaya,

Pehle To Mere Naam Se Mansoob Wo Hua,
Aur Phir Kitab -e- Zeest Ka Unwaan Ho Gaya,

Jab Se Gaya Wo Chor Kar Us Din Se Dil Mera,
Khaali Makan Ki Tarah Veeran Ho Gaya,

Iqrar Kar Saka Na Wo Cahat Ke Ba'wajood,
Apni Ana Ki Aarr Main Anjaan Ho Gaya,

Gar Wo Udas Kar Gaya, Ham Ko To Kia Hua,
Ham Se Bichar Ke Wo Bhi To Be Jaan Ho Gaya..
تصویر
رات کے خواب سنائیں کس کو، رات کے خواب سہانےتھے
دھندلے دھندلے چہرے تھے، پر سب جانے پہچانے تھے

ضدّی، وحشی، الہڑ، چنچل، میٹھے لوگ رسیلے لوگ
ہونٹ ان کے غزلوں کے مصرعے، آنکھوں میں افسانے تھے

وحشت کا عنوان ہماری، ان میں سے جو نام بنی
دیکھیں گے تو لوگ کہیں گے، انشاء جی دیوانے تھے

یہ لڑکی تو ان گلیوں میں روز ہی گھوما کرتی تھی
اس سے ان کو ملنا تھا تو اس کے لاکھ بہانے تھے

ہم کو ساری رات جگایا، جلتے بُجھتے تاروں نے
ہم کیوں ان کے در پر اُترے، کتنے اور ٹھکانے تھے
تصویر
نگری نگری پھرا مسافر گھر کا رستا بُھول گیا
کیا ہے تیرا کیا ہے میرا اپنا پرایا بھول گیا

کیا بُھولا، کیسے بُھولا، کیوں پوچھتے ہو؟ بس یوں سمجھو
کارن دوش نہیں ہے کوئی، بھولا بھالا بھول گیا

کیسے دن تھے، کیسی راتیں، کیسی باتیں گھاتیں تھیں
من بالک ہے، پہلے پیار کا سُندر سپنا بھول گیا

اندھیارے سے ایک کرن نے جھانک کے دیکھا، شرمائی
دھندلی چھب تو یاد رہی کیسا تھا چہرہ، بھول گیا

یاد کے پھیر میں آ کر دل پر ایسی کاری چوٹ لگی
دکھ میں سکھ ہے، سکھ میں دکھ ہے، بھید یہ نیارا بھول گیا

ایک نظر کی، ایک ہی پل کی بات ہے ڈوری سانسوں کی
ایک نظر کا نور مِٹا جب اک پل بیتا بھول گیا

سوجھ بوجھ کی بات نہیں ہے، من موجی ہے مستانہ
لہر لہر سے جا سر ٹپکا، ساگر گہرا بھول گیا

ہنسی ہنسی میں، کھیل کھیل میں، بات کی بات میں رنگ مٹا
دل بھی ہوتے ہوتے آخر گھاؤ کا رِسنا بھول گیا

اپنی بیتی جگ بیتی ہے جب سے دل نے جان لیا
ہنستے ہنستے جیون بیتا رونا دھونا بھول گیا

جس کو دیکھو اُس کے دل میں شکوہ ہے تو اتنا ہے
ہمیں تو سب کچھ یاد رہا، پر ہم کو زمانہ بھول گیا

کوئی کہے یہ کس نے کہا تھا، کہہ دو جو کچھ جی میں ہے
میرا جی کہہ کر پچھتایا اور پھ…
تصویر
محبت میں
اگرچہ دل کی آنکھیں مدتوں پلکیں جھپکنا بھول جاتی ہیں
مگر ان رتجگوں کے سرخ ڈورے نیل گوں سنولاہٹیں
اور ابراؤں کی رازداری بھی
عجب اِک حسن پیدا کرتی ہیں
محبت میں
اگرچہ دھڑکنیں اپنا چلن تک چھوڑ جاتی ہیں
مگر سنگیت ایسی دھڑکنوں کی تھاپ اور سرگم کو ترستا ہیں
محبت میں
اگرچہ بے کلی
دل کو بہت تڑپائے رکھتی ہیں
مگر دل کی تڑپ ہی زندگی کو پتھروں کی زندگی سے
مختلیف بناتی ہیں دنیا میں
محبت میں
اگر چہ آنکھ سے اوجھل ہوئی لگتی ہے
دنیا اِک محبت سوا
لیکین بصیرت کی کئی بینائیاں اور کھڑکیاں کھلی چلی جاتی ہیں
باطن میں
محبت میں
اگرچہ آنسوؤں کع سرخ ہوتے پل نہیں لگتا
مگر یہ سرخیاں کتنے گلستاں چاند تارے
اور زمیں آسمان
رنگیں کرتی ہیں
محبت میں
جدائی دھوپ کے آنگن میں پلتی ہیں
اگرچہ پھر بھی ساری عمر خوابوں اور دعاؤں سے کبھی ٹھنڈک نہیں جاتی
مجھے معلوم ہیں کے تم محبت کے مخالف ہو

مگر جاناں ---

دلیلیں دلیلیں تو دلیلیں ہیں
محبت ان دلیلوں کی کہاں محتاج ہیں
محبت خوبصورت ہے!
(فرحت عباس شاہ)
تصویر
Apni khaatir jagay ho, soye ho
apni khaatir hansay ho, roye ho
kiss liye aaj khoye khoye ho
tum nay aansoo bohat piye apnay
tum bohat saal rah liyah apnay
Ab meray sirf meray hokar raho

husn hi husn ho, zahanat ho
ishq hoon main tou, tum mohabbat ho
tum meri bus meri amanat ho
ji liye jiss qadar jiye apnay
tum bohat saal rah liye apnay
Ab meray sirf meray hokar raho

rehtay ho ranj o ghum kay gheron main
dukh kay aasaib kay baseron main
kaisay choroon tumhain andheron main
tum ko day doonga sab diye apnay
tum bohat saal rah liye apnay
Ab meray sirf meray hokar raho

tum azal sey dukhon kay dheray ho
chahay khud ko ghamon sey ghairay ho
jab sey paida huay ho meray ho
aaj kholain gay lab siye apnay
tum bohat saal rah liye apnay
Ab meray sirf meray hokar raho

ab mujhay apnay dard sehnay do
dil ki har baat dil sey kehnay do
meri banhon main khud ko behnay do
muddaton zakham khud siye apnay
tum bohat saal rah liye apnay
Ab meray sirf meray hokar raho!!
اب اپنی یاد کی خوشبو بھی ھم سےچھینو گے؟
کتابِ دل میں یه سوکھا گلاب رھنے دو... ---------------------مانگی تھی میں نے تم سے محبت کی ذندگی
تم نے تو ذندگی کو محبت بنا دیا...♥ ----------------------------Band Bahar Se Meri Zaat Ka Dar Hai Mujh Main
Main Nahi Khud Main, Yeh Ik Aam Khabar Hai Mujh Main-------------------------کیسے تصویر کریں تیرے خد و خال کو ہم
تجھ کو سوچا ہے زیادہ، تجھے دیکھا کم ہے---------------------------
"ساحل تمام اشکِ ندامت سے اٹ گیا
دریا سے کوئی شخص تو پیاسا پلٹ گیا
لگتا تھا بے کراں مجھے صحرا میں آسماں
پہونچا جو بستیوں میں تو خانوں میں بٹ گیا
یا اتنا سخت جان کہ تلوار بے اثر
یا اتنا نرم دل کہ رگِ گل سے کٹ گیا
بانہوں میں آ سکا نہ حویلی کا اک ستون
پُتلی میں میری آنکھ کی صحرا سمٹ گیا
اب کون جائے کوئے ملامت کو چھوڑ کر
قدموں سے آ کے اپنا ہی سایہ لپٹ گیا
گنبد کا کیا قصور اسے کیوں کہوں بُرا
آیا جدھر سے تیر، اُدھر ہی پلٹ گیا
رکھتا ہے خود سے کون حریفانہ کشمکش
میں تھا کہ رات اپنے مقابل ہی ڈٹ گیا
جس کی اماں میں ہوں وہ ہی اکتا گیا نہ ہو
بوندیں یہ کیوں برستی ہیں، بادل تو چھٹ گیا
وہ لمحۂ شعور جسے جانکنی کہیں
چہرے سے زندگی کے نقابیں الٹ گیا
ٹھوکر سے میرا پاؤں تو زخمی ہوا ضرور
رستے میں جو کھڑا تھا وہ کہسار ہٹ گیا
اک حشر سا بپا تھا مرے دل میں اے شکیب
کھولیں جو کھڑکیاں تو ذرا شور گھٹ گیا "
( شکیب جلالی )
تصویر
رات کا سمندر ہے
رات بھی محبت کی

بات کا اجالا ہے
بات بھی محبت کی

گھات کی ضرورت ہے
گھات بھی محبت کی

نرم گرم خاموشی
سہج سہج سرگوشی

چور چور دروازے
کون چھپ کے آیا ہے

آرزو نے جنگل میں
راستہ بنایا ہے

جھینپتے ہوئے آنگن
نے درخت سے مل کر

کچھ نہ کچھ چھپایا ہے
آسماں کی کھڑکی میں

سکھ بھری شرارت سے
چاند مسکرایا ہے

چاند مسکرایا ہے
چاندنی نہائی ہے

خوشبوؤں نے موسم میں
آگ سی لگائی ہے

عشق نے محبت کی
آنکھ چومنا چاہی

اور ہوا کے حلقے میں
شوخ سی نزاکت سے

شاخ کمسائی ہے
رات کا سمندر ہے

رات بھی محبت کی
بات کا اجالا ہے

رات بھی محبت کی
بات کے سویرے میں

زندگی کے گھیرے میں
روح ٹمٹمائی ہے

وصل جھلملایا ہے
دل نے بند سینے میں

حشر سا اٹھایا ہے
کون چھپ کے آیا ہے

فرحت عباس شاہ
غُرور بیچیں گے ، نہ اِلتجا خریدیں گے
نہ سر جھکائیں گے ، نہ سر جھکا خریدیں گے

قَبول کر لی ہے ، دیوارِ چین آنکھوں نے
اب اَندھے لوگ ہی ، رَستہ نیا خریدیں گے

جھُکیں تو اُس کو ’’سخاوت‘‘ لگے یہ جھُکنا بھی!۔
اب اَپنے قَد کا ’’کوئی‘‘ دیوتا خریدیں گے

یہ ضدی لوگ ہیں اِن سے وَفا کی نہ رَکھ اُمید
جفا گُزیدہ ، مُکرّر جفا خریدیں گے

پھر اُس ’’ہُجوم‘‘ کا ، قبلہ دُرست ہو کیسے
جو قبلہ بیچ کے ، قبلہ نُما خریدیں گے

ہم اپنے شَہر کی ، ملکۂ حُسن کی خاطر
تمہارے شَہر سے ، اِک آئینہ خریدیں گے

مری کتاب ہے ، اور اُس حسیں کی تصویریں!۔
مجھے پتہ تو چلے ، آپ کیا خریدیں گے

خریدتے رہے ہم ’’سادہ پانی‘‘ گر یونہی
وُہ دِن بھی آئے گا ، ہم سب ’’ہو۱‘‘ خریدیں گے!۔

ہر ایک چیز ، برائے فروخت رَکھ دیں گے
تمہارے پیار کی ، ہم اِنتہا خریدیں گے!۔
Ab Ke Tamam Shehar Main Elaan Ho Gaya,
Ek Shaks Meri Zaat Ki Pehchan Ho Gaya,

Pehle To Mere Naam Se Mansoob Wo Hua,
Aur Phir Kitab -e- Zeest Ka Unwaan Ho Gaya,

Jab Se Gaya Wo Chor Kar Us Din Se Dil Mera,
Khaali Makan Ki Tarah Veeran Ho Gaya,

Iqrar Kar Saka Na Wo Cahat Ke Ba'wajood,
Apni Ana Ki Aarr Main Anjaan Ho Gaya,

Gar Wo Udas Kar Gaya, Ham Ko To Kia Hua,
Ham Se Bichar Ke Wo Bhi To Be Jaan Ho Gaya..
تصویر
ابھـی کـچھ دیـر پـہلے رات نے پـلکیـں جھکـائـی ہیـں
...
رات کـی پلکـــوں سے ٹــوٹے کـچھ سـتارے ہـیں
دکـھوں کے اسـتعـارے ہیـں
...
میـں ان کــو دیکـھتا ہــوں تو !!!
تـو مـــیری آنکھــوں مـیں ڈھیـروں خــواب،،،،
تعـــبیـروں کی دکـھ مـیں کـوئـی چـہرہ سـوچـتے ہیـں !!!
اور.....
وہ چہـرہ شـناسـا شـناسـا سے
کـئی چہـروں مـیں تبــــدیـل ہــوتے ہـیں
پـھر ان چہـروں سے کـئـی مـــنظر ابـھرتے ہـیں...
نـــظر مـیں رقــص کـرتے ہـیں...
وہ چـہرے جـو مـری تنـــہائیـــوں کے اشـــک پــارے ہـیں....
مـجھے ہـر حـال مـیں خـود سے پــیارے ہیـں...
ســب ہــی چہــرے تمــہارے ہیــں...
تصویر
Azeez Itna He Rakho K Ji Sambhal Jaye,
Ab Is Qadar Bhi Na Chaho K Dum Nikal Jaye.

Mohabbaton Me Ajab Hai Dilon Ko Dharka Sa,
K Jane Kon Kahan Rasta Badal Jaye.

Main Woh Charagh-e-Sipar Reh-Guzar Dunya Hon,
Jo Apni Zaat Ki Tanhayion Me He Jal Jaye.

Har Ek Lehza Yahi Aarzoo Yahi Hasrat,
Jo Aag Dil Me Hai Woh Shair Me Bhi Dhal Jaye.
Mohabbat Mojiza Kar De
Mere Sehn-e-Hunar Mein
Roshni Karte Khaylon Kii Tilawat Se
Mere Sher-o-Sukhan Mein
Hurf-o-Maanii Kii Hikayat Se
Ussay bhi Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Kar De....

Faseel-E-Dil Pe Likhi Dard Ki Pinhan Ibarat Se
Mohabbat Ko Badan Ki Akhri Sanson Ki Had Tak
Nibha Deni Ki Aadat Se
Ussey Bhi Aashna Karde;
Mohabbat Moajzza Karde....

Sar-e-Mizgaan Chmakte Aanson Ki Jagmagahat Se
Pus-e-Girya Meri Jalti Aankhon Ki Hiddat Se
Sawal-e-Wasal Se Mehroom Honton Per
Dua-e-Shab Ki Hurmat Se
Ussay Bhii Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Kar De....

Aazab-e-Tushnagi Sehti Hui Saanson Kii Wehshat Se
Mere Jazbon Ki Shiddat Se
Mere Hurf-e-Mohabbat Se
Meri Tanha Musafat Se
Ussay Bhee Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Ker De
کیوں نہ ہم اُس کو اُسی کا آئینہ ہو کر ملیں
بے وفا ہے وہ تو اُس کو بے وفا ہو کر ملیں

تلخیوں میں ڈھل نہ جائیں وصل کی اُکتاہٹیں
تھک گئے ہو تو چلو پِھر سے جدا ہو کر ملیں

پہلی پہلی قُربتوں کی پھر اُٹھائیں لذتیں
آشنا آ پھر ذرا نا آ شنا ہو کر ملیں

ایک تُو ہے سر سے پا تک سراپا اِنکسار
لوگ وہ بھی ہیں جو بندوں سے خدا ہو کر ملیں

معذرت بن کر بھی اُس کو مل ہی سکتے ہیں عدیم
یہ ضروری تو نہیں اُس کو سزا ہو کر ملیں

عدیم ہاشمی

دیوار ہے کسی کی، دریچہ کسی کا ہے

دیوار ہے کسی کی، دریچہ کسی کا ہے
لگتا ہے گھر کا گھر ہی اثاثہ کسی کا ہے

اک اور ہاتھ بھی ہے پسِ رقصِ حیلہ جُو
ہم تم تو پتلیاں ہیں، تماشا کسی کا ہے

یہ جو ہیں میرے پاؤں، کسی اور کے نہ ہوں
چل میں رہا ہوں، نقشِ کفِ پا کسی کا ہے

اشکوں سے بھر رہا ہوں میں اپنی دریدہ مشک
اتنے برس کے بعد بھی دریا کسی کا ہے

کیسے کہوں کہ اپنی زباں بولتے ہیں ہم
الفاظ لاکھ اپنے ہوں، لہجہ کسی کا ہے

ممکن نہیں کہ بھیک بھی گھر لے کے جائیں ہم
تابش ہمارے ہاتھ میں کاسہ کسی کا ہے
Jiski Qismat Hi Dar-Badar Tehray ..!!
Woh Bhuja Chand Kis Kay Ghar Tehray..!!

Umar Guzri San'waartey Dil Ko..!!
Kaash Woh Dil Mein Lamha Bhar Tehray..!!

Uss Say Kya Pochna Safar Ki Thakan..!!
Jiski Manzil Hi Rehguzar Tehray..!!

Uski Qeemat , Azaaab Suraj Ka..!!
Woh Sitara Jo Taa-Saher Tehray..!!

Uss Ki Ankhein Udher Gaye Hi Nahe...!!
Log Kya Kya Na Morr Per Tehray..!!

Hum Say Kaisa Ha'zer Hawa-e-Safar..!!
Hum Toa Gird-e-Raah-e-Safar Tehray..!
اگر جذبات سچے ہوں
وفا کے رنگ پکے ہوں
اگر تقدیر ساتھی ہو
کسی کی یاد آتی ہو
تو ایسے میں یہ لازم ہے
پلٹ کر دیکھنا ہوگا
اور ایسا سوچنا ہوگا
کسی کا دیر تک تکنا
کسی کا چپکے سے ہنسنا
♥ کوئی تو معنی رکھتا ہے ♥
Zara Dekho!
Meri Aankhon Mein Dekho!
Meri Aankhon Mein
YaQeen Ki Lau Ko Dekho!
Meri Aankhon Ka
YaQeen Jaano!
YaQeen Ye Itna Na-Pukhta Nahi Ke
Zindagani Ke Masaa'ib Ki,
JhaMelon Ki,
Bikharti Dhool Mein,
Ye DagMaga Jaye,
Zara Dekho!
Meri Aankhon Mein Is Pehlu Badalte,
Karvatein Lete Hue,
Ehsaas Ki Shiddat Ko Pehchano!
Meri In Kaifiyaton Mein,
Niyyaton Mein,
JagMagaati Ek SadaaQat
Bolti Hai
Is SadaaQat Par,
YaQeen Aa Jayega TuMko,

Na Aaye Gar YaQeen Jaanaa_

Magar Dekho!
Suna Hai Ek Duniya Se,
Ke Sachhayi,
Khud Apna Aap Manvaati Hai Logon Se,
Ke Sachi Niyyatein,
Kaifiyyatein Aakhir,
Asar Karti Hai Dil Par,
Raayegaan
Bilkul Nahi Jaati,

To Phir Dekho
Meri Aankhon Mein Dekho..!!
یہ میری غزلیں یہ میری نظمیں تمام تیری حکایتیں ہیں
یہ تذکرے تیرے لطف کے ہیں یہ شعر تیری شکایتیں ہیں
میں سب تری نذر کر رہا ہوں ، یہ ان زمانوں کی ساعتیں ہیں
جو زندگی کے نئے سفر میں تجھے کسی روز یاد آئیں
تو ایک اک حرف جی اٹھے گا پہن کے انفاس کی قبائیں
اداس تنہائیوں کے لمحوں میں ناچ اٹھیں گی یہ اپسرائیں

مجھے ترے درد کے علاوہ بھی اور دکھ تھے ، یہ جانتا ہوں
... ہزار غم تھے جو زندگی کی تلاش میں تھے ، یہ جانتا ہوں
مجھے خبر ہے کہ تیرے آنچل میں درد کی ریت چھانتا ہوں
مگر ہر اک بار تجھ کو چھو کر یہ ریت رنگِ حنا بنی ہے
یہ زخم گلزار بن گئے ہیں یہ آہِ سوزاں گھٹا بنی ہے
یہ درد موجِ صبا ہوا ہے ، یہ آگ دل کی صدا بنی ہے

اور اب یہ ساری متاعِ ہستی، یہ پھول، یہ زخم سب ترے ہیں
یہ دکھ کے نوحے ، یہ سکھ کے نغمے ، جو کل مرے تھے وہ اب ترے ہیں
جو تیری قربت، تری جدائی میں کٹ گئے روز و شب ترے ہیں
وہ تیرا شاعر، ترا مغنی، وہ جس کی باتیں عجیب سی تھیں
وہ جس کے انداز خسروانہ تھے اور ادائیں غریب سی تھیں
وہ جس کے جینے کی خواہشیں بھی خود اس کے اپنے نصیب سی تھیں
نہ پوچھ اس کا کہ وہ دوانہ بہت دنوں کا اجڑ چکا ہے
وہ کوہکن تو نہ…
لبِ خاموش سے اظہارِ تمنا چاہیں
بات کرنے کو بھی تصویر کا لہجہ چاہیں

تو چلے ساتھ تو آہٹ بھی نہ آئے اپنی
درمیاں ہم بھی نہ ہوں یوں تجھے تنہا چاہیں

ظاہری آنکھ سے کیا دیکھ سکے گا کوئی
اپنے باطن پہ بھی ہم فاش نہ ہونا چاہیں

جسم پوشی کو ملے چادرِ افلاک ہمیں
سر چھپانے کے لئے وسعتِ صحرا چاہیں

خواب میں روئیں تو احساس ہو سیرابی کو
ریت پر سوئیں مگر آنکھ میں دریا چاہیں

بھینٹ چڑھ جاؤں نہ میں اپنے ہی خیر و شر کی
خونِ دل ضبط کریں، زخمِ تماشا چاہیں

زندگی آنکھ سے اوجھل ہو مگر ختم نہ ہو
اِک جہاں اور پسِ بردۂ دنیا چاہیں

آج کا دن تو چلو کٹ گیا جیسے بھی کٹا
اب خداوند سے خیریتِ فردا چاہیں

ایسے تیراک بھی دیکھے ہیں مظفر ہم نے
غرق ہونے کے لئے بھی جو سہارا چاہیں

از مظفر وارثی
اُس ادا سے بھی ھوں میں آشنا، تجھے اتنا جس پہ غرور ھے
میں جیوں گا تیرے بغیر بھی، مجھے زندگی کا شعور ھے

نہ ھوس مجھے مئے ناب کی، نہ طلب صبا و سحاب کی
تِری چشم ناز کی خیر ھو، مجھے بے پیے ھی سرور ھے

جو سمجھ لیا تجھے بے وفا، تو اس میں، میری بھی کیا خطا
یہ خلل ھے میرے د ماغ کا، یہ میری نظر کا قصور ھے

کوئی بات دل میں وہ ٹھان کے، نہ الجھ پڑے تیری شان سے
وہ نیاز مند جو کہ سر بہ خم، کئی دن سے تیرے حضور ھے

میں نکل کے بھی تیرے دام سے، نہ گروں گا اپنے مقام سے
میں قتیل جور و ستم سہی، مجھے تم سے عشق ضرور ھے

قتیل شفائی
نفس مضمون بناتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
کتنے عنوان سجاتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
تیرے آنے کی خبر سنتے ہی ، گھر کی چیزیں
کبھی رکھتے ہیں ، اٹھاتے ہیں، بدل دیتے ہیں
حسن ترتیب تسلی نہیں دیتا دل کو
گل سے گلدان سجاتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
گفتگو کو یونہی محتاط بنانے کے لیے
لفظ ہونٹوں پہ جو لاتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
ہم ہیں بے کل سے انہیں جب سے یہ معلوم ہوا
وقت آنے کا بتاتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
چاندنی رات میں آتے ہیں ستارے چل کر
اور تقدیر بناتے ہیں ، بدل دیتے ہیں
بوجھل بوجھل ، سندر سندر ، گہری گہری آنکھوں میں
رات کی چنچل سکھیوں میں ، اپنی ریشمی پلکوں سے
کوئی خواب کبھی مت بننا
سپنے ٹوٹ بھی جاتے ہیں

جیون ایک سفر ہے ایسا ، جس کی منزل تنہائی ہے
جو بھی آس لگائے اس سے ، پگلا ہے سودائی ہے
کسی کو بھی اپنا مت کہنا
ساتھی چھوٹ بھی جاتے ہیں

مُٹھی میں جو لمحے ہیں ، سارے تتلیوں جیسے ہیں
رنگوں کی صورت میں آخر ہاتھوں پر رہ جائیں گے
جانے والے ہر اک پل کو پلکوں بیچ چھپا لو تم
ورنہ ایسا بھی ہوتا ہے
لمحے روٹھ بھی جاتے ہیں
ستارے،چاندنی،مے،پھول،خوشبو
کوئی شے آپ سے بڑھ کر نھیں ھے

زمانے سے نہ کھل کے گفتگو کر
زمانے کی فضا بہتر نھیں ھے

میرا رستہ یونہی سنسان ھو گا
میرے رستے میں تیرا گھر نھیں ھے

مجھے وحشت کا رتبہ دینے والے
تیرے ھاتھوں میں کیوں پتھر نھیں ھے

محبت ادھ کھلی کلیوں کا رس ھے
محبت زہر کا ساغر نھیں ھے

نظر والو! چمک پر مر رھے ھو
ہر اک پتھر یہاں گوھر نھیں ھے

کہاں ھیں آج کل احباب"محسن"
صلیب و دار کا منظر نھیں ھے...

~!~ Harf Tere Liye ~!~

***HAFR TERE LIYEY***
Main ne aisey tujhey mahsoos kiya hai aksar
Jaisey Sooraj ki kiran seep ke dil me Utrey
Jhaisey jharna kahin madhham se suron mein gayey..
Jaisey khushboo ko hawa Rang se hat kar chahey
Jasiey Rangon ko ulfat si sabhi phoolon se
jasiey kiron pe padey dhoop to chamkein tarey..
jasiey sargoshi kare mujh se saba kano mein..
main ne is taur bhi mahsoos kiya haitujh ko
kisi pakeeza se lahjey me azan ho jaisey..
koi masoom kare dars kisi maktab me..
koi sheesta se andaaz E wafaa ho jaisein..
Meri tanhayi mujhey pass tere layi hai..
meri sochon mein kabhi dekh sarapa apna..
Tu hai Duniya Se alag DIL NE SHAHADAT DI HAI..



Dedicated to Almighty Allah


Shagufta Subhani

~!~ Moallim ~!~

AL-MOALLIM


Moallim Phool hota hai
wo apney ILM ki **khushboo**
se Duniya ko sajata hai!!
Zamane bhar ki tareeki
Jahan k Khushk lahjon ko
samo kar bhi.. faqat... wo bant-ta hai
Roashni har soo
wo apney Narm lahjey me
wo apne sheerein lahjey me
samo kar ILM ka Darya
hai karta band koozey me.
wo apney AZM-O-QUWWAT se
Badal Deta hai charon ko
Jahan E ILM ka adraak wa hota hai phir Uss pe
wo apni an-ginat koshih se
saaz E ILM ki Duniya
ko Naghma hai ata karta
ussi ek ilm k naghme ko milti ja-wedani hai
Moallim janta hai pathharon ko Moam sa karna...
Agar HUM sab MOALLIM hain
To hum ko sochna ye hai
k Hum ne kitney pathhar ko
Banaya hai abhi HEERA??????????
kahin ye to nahi k Hum
kisi ghaflat me khoyey hain?

"Ager ab tak nahi socha"

To HUM ko
SOCHNA HOGA!!


Shagufta Subhani

~!~ Agar Mil Na Sakey ~!~

"Mil Na sakey ..."

Ager mil na sakey humdam
to ye taye hai
judayi k sabhi rastey
chalon masdood kartey hain
pakad kar ek Titli ko
sabhi purkhar raston par
Dhanak k rang buntey hain
jahan par sahem jao tum...
wahan jugnoo koi la kar...
ujala itna kartey hain
k tum ko meri ankhon me yaqeen ki shamma mil jayein
wahan par hum nayi tahzeeb ka
ek baab likhtey hain
ager hum mil nahi saktey..
to ye taye hai judayi ko!
kabhi aaney nahi dengey...
tumhein hum apni
iss diniya se ab janey nahi dengey
ager mil na sakey humdam Shagufta Subhani

Tere Mere Darmiyan

تصویر
تیرے میرے درمیاں ہے، یہ جو فاصلہ سا، کیوں ہے
دل و جان کا اذیت سے یوں رابطہ سا کیوں ہے

کیوں ہے دل اداس میرا۔ کیوں ہے وحشتوں کا پہرا
تیرے غم کا بنتا مٹتا یہاں دائرہ سا کیوں ہے

کیوں ہے جان جاںکنی میں، کیوں ہے روح بے بسی میں؟
کہ جنوں کی منزلوں سے میرا واسطہ سا کیوں ہے

کیوں ہے اضطراب مجھ میں کیوں ہے وحشتوں کا عالم
میری دسترس میں ہو کے بھی وہ بھاگتا سا کیوں ہے

وہ جو پاس ہوکے بھی ہے، وہ جو دور مجھ سے اتنا
ہے شگفتہؔ دل وہ میرا، وہی اک جدا سا کیوں ہے

شگفتہ سبحانی 
~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~
Tere mere Darmiٓyaan hai..ye jo fasla sa kyun hai?
Dil o Jaan ka Azeeyat se Yun raabta sa kyun hai?

kyun hai Dil Udaas Mera kyun hai Wahshaton ka pahra?
tere Gham ka banta mit'ta yahan dayera sa kyun hai?

Kyun hai Janjan-kuni me kyun hai Rooh be-basi me?
Ke Junoon ki manzilon se mera Waa.sta sa kyun hai?

Kyun hai Izteraab mujh me kyun hai wahshaton ka aalam..
Meri Dastaras me ho k bhi wo Bhagta sa kyun hai?

Wo jo pass ho ke bhi hai ,wo jo door mujh se itna
hai SHAGUFTA dil wo mera ..wohi ek Judaa sa kyunhai??

Shagufta…

~!` Dost ~!~

Dost



Zindagi ki Rahon me..
iss tarha bhi hota hai..
Ajnabi se mil kar bhi
ajnabi nahi rahtey..

jiss jagah zamane me..
haath chhhoot jatey hain..
Log rooth jatey hai..
Toot jatey hain rishtey
han ussi zamane me..
iss taraha bhi hota hai..
Ajnabi se mil kar bhi
Ajnabi nahi rahtey...

jab Udaas hoti hoon..
jab kabhi bhi Tanhayi
mujh ko gher leti hai..
khwahishon k roopahley
Taar jhunjhunatey hain..
Roashni nahi milti..
Raasta nahi milta
zindagi ki sachhayi..
mujh pe jab bhi khulti hai..

Han ussi zamane me...
Ban k ek saaya sa..
Ban k ek jhonka sa...
Khushboowon ki soorat me
aa k mujh se milta hai  mere saath hota hai..
mere pass hota hai..
meri sooni ankhon me
har dafa ye dekha hai..
"DOSTI "se tu apni
apni aankh k sarey  Rang mujh me bharta hai......
Shagufta Subhani

~!~ Khwab Jazeerey ~!~

"Khwaab Jazeerey"

Yunhi Sochna Tujhey Khwaab Sa
Aour dekhna Tujhey Khwaab me...
Aour Khud ko karna G U L A A B phir,
jab dekhna Tujheyy Roo*Ba*rooooo

Tere Aks**E**Gul ko sametna
Tere Naqsh**E** Paa ko hi dekhna
kabhi Dena tujh ko sada koi
kabhi Be khudi me tere bina
Tujhey dekha mere Roo**Ba**roo


Kabhi ban k naghma e Jan koi..
Tere Lab pe misl-e-ghazal Rahoon
kabhi Chooona Tujh ko hawaon sa..
kabhi khushboon ka shaher banoon...
kabhi Dekhna Tujhey ghaur se...
aour sochna kabhi har paher...
Aour khud ko karna Gulaab phir..
aour dekhna tujhey Roo ba Roo..


Tere Hath me mera Haath ho..
mere har safer me tu saath ho..
meri shaam tujh pe Tamam ho..
Mere Har subah tere Naam ho..
Tere saath bhi
Mere Baad bhi...
ye safer rahey Mera Aakhri..
Aour khud ko karna Gulaab phir
Tujhey Dekhna Mere ROO BA ROO....



Shagufta Subhani

~!~ Tarana ~!~

Tarana
Shairy Ek Phool hai
Ek Saaz hai
Aawaaz hai
Shairy ek Dard hai
Ehsaas hai ...
Aaghaaz hai...!!
Hai kabhi Taron si Roshan
aour kabhi Mahtaab hai
Hai Darkhshan ye kabhi
aour khud kabhi Aakaash hai
shairy Ek Naghma E Jaan,
Aour kabhi lahja koi...
khamushi ka Ek lamha
ye kabhi khud "Aaghi"
Hai Payam E Amn ye
aour ye hai ulfat ka Jahan
hai subak Bad E saba si
khunk Maujon ki tarha
lahlalatey bagh si ...
kaliyon ki Taraha shokh ye
Shairy ek Husn hai
ek Naaz hai
Andaaz hai
Shairy *khushboo* kabhi
Chanda kabi Payal kahin...
Shairy Banta wo mit-ta Dayera ,Gardaab hai
shairy kajal kahin ,,,,,
kakul kahin Badal.... kahin
shairy Mathey ka jhoomar ...aour kabhi Anchal kahin
shiary Uljhi hui zulfon k pech o kham kahin
shairy Ek Dor hai
resham koi Rishta kabhi
shairy Ek Khwaab hai
jo na mit paya kabhi
Iss Dil ka Wo Ek Dagh hai
Hai safer ye Dhoop se le kar kisi saaaye Talak

Raston se manzilon ki Buss yahi Pahchaan hai

Shagufta Subhani

~!` Do Raye ~!~

محبٌت میں کبھی دورائے کا امکاں نہیں ھوتا
یہ ھوتی ھے تو ھوتی ھے
نہیں ھوتی تو جتنا بھی جتن کر لو،نہیں ھوتی
کوئی اچھا اگر لگ جائے تو سب خامیاں اُسکی
اچانک، خوبیوں کی اوڑھنی میں چُھپ سی جاتی ھیں
زمانہ لاکھ سمجھائے سنبھل جاؤ
وہ ایسا ھے وہ ویسا ھے
سمجھ میں کچھ نہیں آتا
سماعت اور بصارت کو سُجھائی کچھ نہیں دیتا
سمجھ آتا ھے اُس لمحے
کہ جب دامن میں لاکھوں چھید ھو جائیں
کبوتر کے پروں کے ساتھ لپٹے
سب عیاں جب بھید ھو جائیں
محبٌت میں کبھی دورائے کا امکاں نہیں ھوتا
یہ ھوتی ھے تو ھوتی ھے
نہیں ھوتی تو جتنا بھی جتن کر لو،نہیں ھوتی
فاخرہ بتول

~!~ Mohabbat moujza kardey ~!~

Mohabbat Mojiza Kar De
Mere Sehn-e-Hunar Mein
Roshni Karte Khaylon Kii Tilawat Se
Mere Sher-o-Sukhan Mein
Hurf-o-Maanii Kii Hikayat Se
Ussay bhi Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Kar De....

Faseel-E-Dil Pe Likhi Dard Ki Pinhan Ibarat Se
Mohabbat Ko Badan Ki Akhri Sanson Ki Had Tak
Nibha Deni Ki Aadat Se
Ussey Bhi Aashna Karde;
Mohabbat Moajzza Karde....

Sar-e-Mizgaan Chmakte Aanson Ki Jagmagahat Se
Pus-e-Girya Meri Jalti Aankhon Ki Hiddat Se
Sawal-e-Wasal Se Mehroom Honton Per
Dua-e-Shab Ki Hurmat Se
Ussay Bhii Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Kar De....

Aazab-e-Tushnagi Sehti Hui Saanson Kii Wehshat Se
Mere Jazbon Ki Shiddat Se
Mere Hurf-e-Mohabbat Se
Meri Tanha Musafat Se
Ussay Bhee Aashna Kar De
Mohabbat Mojiza Ker De

~!` Kuch Asha'ar ~!~

Aik Misraa hai Zindagi Meri
Tum jo chaho to "Sha'air" hojaye
------------------------------------------------
Aasayish-E-Hayaat Too Mil Jaye Gi Kabhi...
Lekin Sakoon-E-Qalb Muqaddar Ki Baat Hai...!!!
---------------------------------------------------------
Ho Ta'aluq....Tou Rooh Se Ho..
DiLl Tou AkaaR...Bhar Bhi Jatay Hain !!
------------------------------------------------------
•- Kuch yoOn Hua k Jab bhi ZaroOrat pari Mujhe -•-
-•- Har Shakhs ittefaaq sq MajboOr hO gaya -•-
------------------------------------------------------------
Aql agar azma--ekirdaar ki qayel hoti
Ishq ko rutba-e-ilhaam diya ja sakta
-------------------------------------------------
Mohabbat aik khushboo hai, hamesha saath rehti hai
Koi insaan tanhai main bhi tanha nahi rehta
-------------------------------------------------------
Tujh Ko Aankhon K Dareechon Se Juda Kaise Karon
Tu Meri Zaat K Har Pehlu Se Bayaan Hotaa Hai..
----------------------------------------------------------
"Kaash Ke …

~!~ Aye Roop Nagar Ki Shehzadi ~!~

Aye Roop Nagar Ki Shehzaadi,
Thodi Si Inayat Ho Jaye,
Ek Roz Agar Tum Chupke Se,
Meri Aankhon Ko Sairaab Karo,
Bechain Mera Dil Rehta Hai,
Kuch Aur Isey Betaab Karo,
Is Talkh Haqeeqat Sehra Ko,
Ek Meetha Sundar Khwab Karo,
Ek Roz Meherbaan Ho Jao,
Mere Dil ke Nigehbaan Ho Jao,
Is Tapti Dhoop Ki Sakhti Mein,
Ek Shaam Ki Chaoun Mil Jaye,
Murjha Se Gaye Hai Din Mere,
Ek Shaam To Meri Khil Jaye,
Aur Shayad Mere Honthon Se,
Har Zakhm Tera Bhi Sil Jaye,
Hum Qais Nahi Farhad Nahi,
Par Phir Bhi Kahin Aabad Nahi,
Shayad Ye Karishma Ho Jaye,
Tumhe Humse Mohabbat Ho Jaye,
Aye Roop Nagar Ki Shehzadi,
Thodi Si Inayat Ho Jaye...!!!!

~!~ Karishma Sazian ~!~

Muhabat..
bay ghata ,banjar fazaon ko..
brasnay ka hunar day ker..
zameen sairab krti hai..
Gulabi rut Muhabat ki..
dilon k sookhay shajar aabad krti hai..
Muhabat mai bari taqat ..
krishma saz'ian itni......!

Laikin tere baghair ........

Tum yaad ho to naqsh ho mere hawaas par...
Tum ashk ho to mere dukhon ka ilaaj ho...
Tum khuwaab ho to meri in aankhon main ho kahan?
Tum wehm ho to mujh ko haqeeqat say kia gharz...
Tum ba'is-e-safar ho hunar ki urraan ho...
Tum husn ho to mere takahyyul ki jaan ho...
Tum raat ho to mujh ko kahan subha ki talab...
Tum noor ban ke dil main samaye ho aaj-kal...
Tum khaak ho to khaak nasheenon ki ho talaash...
Tum dard ho to rooh pe chhaaye ho aajkal...
Tum dasht ho to main bhi musafir hoon dasht ka...
Tum chand ho to talkh andhairon ki kia fikr...
Tum bay niyaaz ho to zamaney say ho alag...
Tum rang ho to phir yeh baharon ka zikr kiya...
Tum bay-samar rutton main baharon ki ho umeed...
Tum reh guzaar-e-shoq main jazba junoon ka...
Tum aarzoo ho Ehl-e-tamanna ki ho khalish...
Tum rat-jagon ki bheerr main lamha sukoon ka...
Tum bewafa rutton main hawala ho ishq ka...
Tum ba-basi ho phir bhi muheet-e-hayaat ho...
Tum ik kiran ho noor-e-azal say dhuli hui...
Tum taazgi ho shabnami phoo…
تم مِرے درد بھی، غم بھی ، مِرے آلام بھی تم
تم مِرا چین ہو جاناں، مِرا آرام بھی تم

کامیابی کو نہیں ہم نے تمہیں چاہا ہے
ہم تمہارے ہیں بھلے ہو گئے ناکام بھی تم

میں مسیحا ہوں اگر، میرا وظیفہ تم ہو
میں ہو مجرم تو مِری جاں مِرا الزام بھی تم

مختلف حیلوں بہانوں سے مجھے سوچتے ہو
ایک دن کُھل کے پکارو گے مِرا نام بھی تم

رات دن تم کو فقط تم کو مجھے سوچنا ہے
میری فرصت بھی تمہی اور مِرا کام بھی تم

جس سے روشن مرا آنگن ہے تمہی ہو وہ چراغ
سچ تو یہ ہے کہ تمہی گھر ہو دَر و بام بھی تم

یہ سیاست بھی عجب کھیل ہے بھولے پنچھی
یہاں صیّاد بھی تم ہو، تو تہِ دام بھی تم

~!~ Naya Suraj ~!~

نیا سورج نیا جلوہ نئی تنویر لے آو
ہمیشہ خواب لائے ہو کبھی تعبیر لے آو

زباں بھی بند کرلیتے مگر اب حکم آیا ہے
تصور کے لیے بھی آہنی زنجیر لے آو
... ...
مرے خوابوں بڑی مشکل سے اس دل کو سلایا ہے
کہیں ایسا نہ ہو تم پھر وہی تصویر لے آو

ہمارا قتل ایسا بھی کوئی مشکل نہیں یاروں
جگر ہاتھوں پہ رکھا ہے تم اپنے تیر لے آو

مری گمنامی پر یہ مشورہ ہے اہل دنیا کا
قلم کو بیچ کر بازار سے شمشیر لے آو

سنہرے بال کھولے منتظر بیٹھی ہے جو کب سے
مصدق زندگی سے اپنی وہ تقدیر لے آو

~!~ Mohabbat Jaag Jati Hai ~!~

Suno aye Chaand si larki
Abhi tum keh rahi theen na
Tumhain mujh se mohabbat ho nahi sakti
Chalo mana ke yeh sach hai
Magar aye chaand si larki
Mujhey itna bataou tum
Ke jab mosam badalte hain
Gulon main rang bharte hain
Parindey chehchahatey hain
Sureele geet gaatey hain
To kyun tum muztarib ho kar
Akele pan se ghabra kar
Hawa ko raaz deti ho
Mujhey awaaaz deti ho
Suno aye chaand si larki
Tumhare samney koi mera jab naam leta hai
To phir kyun chounk jati ho
chalo mana
tumhain mujh se mohabbat ho nahi sakti
Magar itna samajh lo tum
Jahan chahat nahi hoti
Wahan nafrat ke hone ka koi imkaan nahi hota
Mera Daawa Hai Chahat Mein
Jahan Nafrat Nahin Hoti
Wahan Aksar Yeh hota Hai
Agar Kuch Waqt Kat Jaye
Same Ki Dhool Chat Jaye
To Wehshat Bhaag Jati Hai
Mohabbat...Jag Jaati Hai.
Mohabbat.. jaag jati hai

Arshad Malik

~!~ Aik Ghazal ~!~

کہو دست محبت سے ھر اک در پر یہ دستک کیوں
کہا سب کے لیے میں پیار کا مکتوب لایا ھوں

کہو پنہاں کیا ھے کیا دل پردہ نشیں ھم سے
کہا وصل نہاں کی خواھش محجوب لایا ھوں
...
کہو کیا داستاں لائے ھو دل والوں کی بستی سے
کہا اک واقعہ میں آپ سے منسوب لایا ھوں

کہو یہ جسم کس کا، جاں کس کی، روح کس کی ھے
کہا تیرے لیے سب کچھ مرے محبوب لایا ھوں

کہو کیسے مٹا ڈالوں انا، میں التجا کر کے
کہا میں بھی تو لب پر عرض نامطلوب لایا ھوں

کہو سارا جہاں کیسے تمہارے گھر کے باہر ھے
کہا سب جس کے دیوانے ہیں وہ محبوب لایا ھوں

کہو ٹوٹے ھوئے شیشے پہ شبنم کی نمی کیسی
کہا قلب شکستہ، دیدہٴ مرطوب لایا ھوں

کہو غم لائے ھو کتنا محبت میں بچھڑنے کا
کہا بس یہ سمجھ لو گریہٴ یعقوب لایا ھوں

کہا تکلیف لایا ھوں نہیں ھے انتہا جس کی
کہا میں بھی وہیں سے دامن ایوب لایا ھوں

کہو غواص کیا لائے ھو بحر دل کے غوطے سے
کہا لایا ھوں جو کچھ بھی بہت ہی خوب لایا ھوں

کہا کیا لے کے آئے ھو جہان بیوفائی سے
کہا اک چشم حیراں اک دل مضروب لایا ھوں

کہو تحفہ عدیم اشعار میں کیا لے کے آئے ھو
کہا شعروں کی سولی پر دل مصلوب لایا ھوں

~!~ Woh shakhs ~!~

Woh shakhs jaise k jadoo gar ho

Phawaar lehje se dasht-e-dil pe

Woh jab bhi barsay

To khusk matti mein jaan daalay

Be'jaan paron mein urraan daalay

Woh jab bhi maathay pe haath rakhay

Mareez khud ko he bhool jaye

Bhula k ranj-o-alam saaray

Khushi se jaise k phool jaye

Woh shakhs jaise k jadoo gar ho

Woh muskuraye to laala-o-gul

Qaaben apni he noch daalen

Kali chatakna he bhool jaye

Ke bhanwara lehje mein loch daalay

Woh subk ro, aisa dil nasheen hai

Ke us k jaisa kaheen nahi hai

Yeh lafz kaise bayan karen ge

Hazaar rangon ka woh mujassam

Woh narm khoi woh dil'nawazi

Woh chup k lehje mein ek takallum

Woh shakhs jaise k jadoo gar ho

Azad Hussain Azad

Mohabbat Kiya hai???

Main Shayer Hoon
Toa Aksar Laog Mujh Se Poochtay Hain
Is Haseen Asraar Kay Baray main
Batain Toa Bhala Kiya Hai…?
Muhabbat Akhirish Hai Kiyaa…..?”
Wasi Main Hans Kay Kehta Hoon
Kisi Piyasay Ko Apnay Hissay Ka Pani Pilana Bhi..
Muhabbat Hai!
Bahnwar Mai Doobtay Ko Sahil Tak Lai Kay Jana Bhi..
Muhabbat Hai!
Kisi Kay Wastay Nanhi Si Qurbani..
Muhabbat Hai!
Kaheen Hum Raaz Saray Khoal Saktay Hoan Magar Phir Bhi,
Kisi Ki Babasi Ko Daikh Ker Khamosh Hojana Bhi…
Muhabbat Hai!
Ho Dil Mai Dard, Veraani Magar Phir Bhi
Kisi Kay Wastay Jabran Hi Hoantaon Pe Hansi Lanaa
Zabardasti Hi Muskana…
Muhabbat Hai!
Kaheen Barish Mai Sehmay, Bheegtay Billi Kay Bachay Ko
Zara Si Dair Ko Ghar Lai Kay Anaa Bhi
Muhabbat Hai!
Koi Chirya Jo Kamray Mai Bhatakti Aan Nikli Ho
Toa Us Chirya Ko
Pankhaa Band Kar Kay Rastaa Bahir Ka Dikhlana
Muhabbat Hai!
Kisi Kay Zakham Sehlanaa
Kisi Rotayhuay Dil Ko Behlana..
Muhabbat Hai!
Kay Metha Boal, Methi Baat, Methay Lafz, Sab Kiya Hhai?
Muhabbat Hai!
Muhabbat Aik Hi Bas Aik Hi…

~!` Kuch Asha'ar ~!~

تصویر
Chalo Kainaat Baant Laitay Hain,
Tum Mere, Baqi Sab Tumhara hai....
--------------------------------------------------------
Tujh se darkaar Mohabbat hy, Mohabbat k evaz…..
Main nhi chahti mujh pe, Tera ehsaan rahy…..!
---------------------------------------------------------------
Baat sirf itni hai ,zindagi ki rahon mein...
Sath chalny walon ko hamsafar nahi kehtay...!!!
---------------------------------------------------------------
Ye Dil To Kisi aur Dais Ka Parinda Hai...
Seene Me To Rehta Hai Mager Bas Me Nahi Rehta ...
-------------------------------------------------------------------
Uthti nahi nigah kisi or ki taraf
Paband kar gai hai kisi ki nazar mjhe
---------------------------------------------------------------
Mujhey samjha na ayeZahid, Ke Ab To Ho Chuki Mujh Ko,
Mohabbat Mashwara Hoti To Tum Se Pooch Kar Karte .
---------------------------------------------------------------
Chalo ke aaj koi bachpane ka khail khelain hum
Bari muddat hui be-saakhta hans kar nahi dek…

~!~ Hum Pe Jo Guzarti hai ~!~

تصویر
~!~ Hum Pe Jo Guzarti Hai ~!~
Hum Pe jo guzarti haiw oh kisi ko kiya maloom Ham to apne sarey dukh khud hi jhel lete hain Aur apni khushiyan bhi khud hi baant lete hain Dard-o-gham ki raaton main mil ke beth jaatey hain
Ansoun ki mishal sio roshni barhatey hain Choti choti umeedain  Aur kuch suhaane khwab mil ke dekh lete hain Ham ksiis saharey ke muntazir nahi rehte Apne gham ki dildaari khud hi kartey rehtey hain
Uljhey suljhey rishton ki dorr buntey rehte hain Zindagi ke sehra main  Apne khali hathon se phool chunte rehte hain Haath khali ho to kiya dil bharey hi rehte hain Mosam-e-Khizan main bhi ham harey hi rehtey hain



~!` Tera Mere Daira ~!~

Main thi dhondti kisi aur ko
Tum khojtey kisi aur ko
Bana daira yun tera mera
Na tujhey Khabar, na mujhey pata
Wohi aik chez thi mushtarik
Wohi aik cheez thi darmiyan
Wohi aik jaisi talash thi
Tujhey bhi wohi
Mujhey bhi wohi
Yun bana tera mera daira
Wohi ik khala jo na bhar saka
Magar us khala ki talash main
Kisi ik jaga miley is tarah
Tum bana tera mera daira
Kahin "Main", Mohabbat" aur "Tum"
Jo miley to phir na bicharr sakey

زمرہ جات

اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل