اشاعتیں

July, 2014 سے پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

آج کی بات ۔۔ 26 جولائی 2014

تصویر
ﻧﮧ ﮨﺮ ﻣﻌﺬﺭﺕ ﮐﺮﻧــﮯ ﻭﺍﻻ ﺧﻄﺎﻭﺍﺭ ﮨﻮﺗﺎ ﮬـــﮯ ﺍﻭﺭ ﻧﺎ ﮨﯽ ﮐﻤﺰﻭﺭ۔ ﯾﮧ ﺻﻔﺖ ﺗﻮ ﻭﻓﺎﺩﺍﺭ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﭘﺎﺋﯽ ﺟﺎﺗﯽ ﮬـــﮯ ﯾﺎ ﭘﮭﺮ ﺍﭼﮭــﮯ ﻭﺍﻟﺪﯾﻦ ﮐﮯ ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﺍﭼﮭﯽ ﺗﺮﺑﯿﺖ ﭘﺎﻧــﮯ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﻣﯿﮟ.

آج کی بات۔۔۔ 15 جولائی 2014

تصویر
ﮐﭽﮫ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﻮ ﺗﻮﻓﯿﻖ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺧﻮﺵ ﺭﮦ ﺳﮑﯿﮟ، ﺍﻭﺭ ﻧﮧ ﮨﯽ ﺍﺗﻨﺎ
 ﻇﺮﻑ ﮐﮧ ﺍﻭﺭﻭﮞ ﮐﻮ ﺧﻮﺵ ﺩﯾﮑﮫ ﺳﮑﯿﮟ

شیطان کے ممکنہ حملے

تصویر
آج کا آرٹیکل اسلئے بھی اہمیت کا حامل ہے کہ اس میں شیطان کے ممکنہ حملوں کا ذکر ہے کہ انسان کا نفس کب کہاں پاتا ہے وہ . جی ہاں نفس کوئی ایک مخصوس حصے کا نام نہیں ہے بلکہ یہ آپکے ہر عضو میں پایا جاتا ہے آپکا دل دماغ ہاتھ پیر غرض ہر حصّے کا ایک نفس اور ایک ضمیر ہے ، بعض اوقات ہم دل کے نفس پر قابو پا لیتے ہیں اور دماغ والے سے ہار جاتے ہیں لہٰذا آج تفصیل سے اس پر بات ہوگی .. جیسا کہ میں نے پہلے پچھلی اقساط میں بیان کیا کہ ابلیس انسان سے زیادہ عمر والا اور تجربہ کار ہے۔ اس نے انسان کو تخلیق ہوتے ہوئے دیکھا ہے اور ہمیں احادیث مبارکہ سے پتہ چلتا ہے کہ جب انسان کا پُتلا بے جان پڑا ہوا تھا تو یہ خبیث اس وقت بھی اس پُتلے کی تحقیر کر تا تھا۔ جسم کے نچلے حصے سے داخل ہو کر منہ سے نکل آتا تو کبھی منہ میں داخل ہوکر نچلے حصے سے باہر آتا۔ٹھٹا کرتا وغیرہ وغیرہ۔ اس کو ہماری کمزوریوں کا بھی علم ہے اور ہماری طاقت اور مضبوطی کا بھی۔اسے علم ہے کہ ہماری کن چیزوں کو چھیڑ کر وہ ہمیں غلط کاموں پر اکسا سکتا ہے اور ہماری کون سی چیزیں ایسی ہیں جن سے ہمیں غافل کردے تو ہم اپنی طاقتوں کا استعمال نہیں کر …

حضرت یونس علیہ السلام کامچھلی کے پیٹ میں زندہ رہنا۔ جدید واقعات و تحقیقات کی روشنی میں

تصویر
حضرت یونس علیہ السلام کامچھلی کے پیٹ میں زندہ رہنا۔ جدید واقعات و تحقیقات کی روشنی میں
کاتب: طارق اقبال بتاريخ:

حضرت  یونس ؑ  کو اللہ تعالیٰ نے نینویٰ (موجودہ عراق کا شہر موصل )کی بستی کی ہدایت کے لیے بھیجا۔نینویٰ میں آپؑ کئی سال تک ان کو تبلیغ کی دعوت دیتے رہے ۔مگر قوم ایمان نہ لائی تو آپ ؑ نے ان کو عذاب کے آنے کی خبر دی اور ترشیش (موجودہ تیونس )کی طرف جانے کے لئے نکلے۔حضرت یونس ؑ جب قوم سے ناراض ہو کر چلے گئے تو قوم نے آپ ؑ کے پیچھے توبہ کرلی ۔ دوسری طرف آپ ؑ اپنے سفر کے دوران دریا کو عبورکرنے کے لیے اسرائیل کے علاقہ یافا میں کشتی میں سوار ہوئے ۔کچھ دور جاکر کشتی بھنور میں پھنس گئی ۔ اس وقت کے دستور اور رواج کے مطابق یہ خیال کیا جاتا تھا کہ جب کوئی غلام اپنے مالک سے بھاگ کر جارہا ہو اور کشتی میں سوار ہوتو وہ کشتی اس وقت تک کنارے پر نہیں پہنچتی جب

تک اس غلام کو کشتی سے اتار نہ لیں ۔
اب کشتی کے بھنور میں پھنسنے پر ان لوگوں نے قرعہ ڈالا جو حضرت یونس ؑ کے نام نکلا۔تین دفعہ قرعہ آپ ؑ کے نام ہی نکلا تو آ پ ؑ نے فرمایا کہ میں ہی غلام ہوں جو اپنے آقا  کو چھوڑ کا جار ہا ہوں۔ آپ ؑ نے خود ہی دریا …

ہمارا دماغ

تصویر
۔ دماغ آپ کے وجود کا وہ اہم حصہ جو آپ کو چیزیں سمجھنے کی صلاحیت دیتا ہے ۔ آپ اپنے آس پاس کی چیزوں، حالات و واقعات کے بارے میں جو رائے قائم کرتے ہیں وہ اسی دماغ کےکارخانے میں آپ کی تمام حسوں سے گزر کر قائم ہوتی ہے ۔ یہ بھی سچ ہے کہ آپ اور آپکا دماغ دو مختلف چیزیں ہیں ۔ مگر اس دنیا فانی کے اندر آپ کا دماغ ہی آپ کے تمام فیصلوں پر حاوی ہوتا ہے جو مادی وجود رکھنے والی ان تمام چیزوں کے بارے میں آپ کے فیصلوں پر اثر انداز ہونے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ جو آپ کو اس دنیا میں نظر آتی ہیں ۔ آپکا دماغ دو طریقوں سے کام کرتا ہے ۔ ایک کسی بھی چیز کے بارے میں صرف اس حد تک انفارمیشن لے کر فیصلہ کرلیتا ہے جتنی اسے ضرورت ہوتی ہے مثلاً آپ کسی تحریر کے شروع میں ہی فیصلہ کرلیتے ہیں کے وہ آپکے پڑھنے کے لائق ہے بھی یا نہیں یا کسی بھی سوال کے بارے میں صرف مطلوبہ انفارمیشن لے کر جواب حاصل ہوجاتا ہے اگر میں آپ سے پوچھوں کےموسیٰ ؑ طوفان سے پہلے اپنی کشتی میں ہر اقسام کے جانور کتنی تعداد میں لے کر گئے تھے؟ تو اگر آپ کا جواب بھی دو ہے تو یہ سوال دوبارہ پڑھیں۔ اور دوسرا طریقہ جو ہمارا دماغ استعمال کر…

سورہ کہف بمعہ ترجمہ

تصویر
اعوذ بالله من الشیطان الرجیم بسم الله الرحمن الرحيم
سورۃ کھف ترجمہ : مولا فتح محمد جالندھری
الْحَمْدُ لِلَّهِ الَّذِي أَنزَلَ عَلَى عَبْدِهِ الْكِتَابَ وَلَمْ يَجْعَل لَّهُ عِوَجَا o سب تعریف اللہ ہی کو ہے جس نے اپنے محبوب بندے محمد ﷺ پر یہ کتاب نازل کی اور اس میں کسی طرح کی کجی اور پیچیدگی نہ رکھی۔
قَيِّماً لِّيُنذِرَ بَأْساً شَدِيداً مِن لَّدُنْهُ وَيُبَشِّرَ الْمُؤْمِنِينَ الَّذِينَ يَعْمَلُونَ الصَّالِحَاتِ أَنَّ لَهُمْ أَجْراً حَسَناً o بلکہ سیدھی اور سلیس اتاری تاکہ لوگوں کو عذاب سخت سے جو اسکی طرف سے آنے والا ہے ڈرائے اور مومنوں کو جو نیک عمل کرتے ہیں خوشخبری سنائے کہ انکے لئے ان کے کاموں کا نیک بدلہ یعنی بہشت ہے
مَاكِثِينَ فِيهِ أَبَداً o جس میں وہ ہمیشہ رہیں گے۔
وَيُنذِرَ الَّذِينَ قَالُوا اتَّخَذَ اللَّهُ وَلَداً o اور ان لوگوں کو بھی ڈرائے جو کہتے ہیں کہ اللہ نے کسی کو بیٹا بنا لیا ہے۔
مَّا لَهُم بِهِ مِنْ عِلْمٍ وَلَا لِآبَائِهِمْ كَبُرَتْ كَلِمَةً تَخْرُجُ مِنْ أَفْوَاهِهِمْ إِن يَقُولُونَ إِلَّا كَذِباً o ان کو اس بات کا کچھ بھی علم نہیں اور نہ انکے باپ دادا ہی کو تھا۔ یہ ب…

زمرہ جات

اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل