اشاعتیں

August, 2017 سے پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

آج کی بات ۔۔۔۔ 30 اگست 2017

تصویر
~!~ آج کی بات ~!~
مجھے اپنے ملک کے لوگ مایوس اچھے نہیں لگتے ۔ میں چاہتا ہوں کہ وہ مثبت بنیں۔ پر امید۔ اونچے خواب رکھنے والے ۔ وسیع سوچ رکھنے والے ۔ میں چاہتا ہوں لوگ شکر گزار بنیں۔ جو ہے اس کی قدر کریں۔ جو نہیں ہے ‘ اس کو زیادہ نہ سوچا کریں۔
نمرہ احمد کے نئے ناول "حالم" سے اقتباس

ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر ۔۔۔ حصہ- 12

تصویر
ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر حج کی داستان حج کی اصل روح کے تعارف کے ساتھ
تحریر: پروفیسر ڈاکٹر محمد عقیل حصہ-12
منیٰ کا خیمہ خیمے میں اب بھی اکثر لوگ سورہے تھے۔ کچھ دیر بعد مجھے باتھ روم کی حاجت ہوئی لیکن باتھ رومز کا تو منظر ہی کچھ اور تھا۔ وہاں طویل لائینیں لگی ہوئی تھیں۔ بہرحال فراغت کے بعد واپس ہی آیا تھا کہ بارش شروع ہوگئی۔ یہ بارش قریب بارہ بجے تیز ہوئی اور عصر تک جاری رہی۔ خیموں میں پانی تو نہیں بھرا البتہ عورتوں کی سائیڈ پر پانی آگیا۔لوگ بارش کے نافع ہونے اور اس کے ضرر سے بچنے کی دعائیں مانگ رہے تھے۔ بارش کافی طوفانی تھی اور جدہ تک پھیلی ہوئی تھی۔ خدا خدا کرکے بارش رکی۔ اور سب نے اطمینان کا سانس لیا۔ بعد میں علم ہوا کہ اس بارش سے خاص طور جدہ میں بڑی تباہی ہوئی ہے اور ہزاروں لوگ اس سیلاب کی نظر ہوگئے۔

حج کا فرض اسلام سے قبل بھی ادا کیا جاتا تھا اور مشرکین مکہ منی میں قیام کے دوران شعرو شاعری کی محفلیں منعقد کرتے، اپنے آباو اجداد کے قصے بیان کرتے، جگت بازی کرتے، کہانیاں و قصے بیان کرتے اور دیگر باتوں میں اپنا وقت ضائع کرتے تھے۔ اللہ تعالیٰ نے قرآن میں ان کے رویے پر تنقید کی او…

آج کی بات ۔۔۔ 29 اگست 2017

تصویر
~!~ آج کی بات ~!~
موت کا ذائقہ سب کو چکھنا ہے، مگر زندگی کا ذائقہ کسی کسی کو نصیب ہوتا ہے
مولانا جلال الدین رومی

کیا قربانی قبول ہوئی؟؟ از ڈاکٹر محمد عقیل

تصویر
*کیا قربانی قبول ہوئی؟* تحریر:  ڈاکٹر محمد عقیل
*• "حضرت قربانی سے متعلق کچھ ارشاد فرمائیں۔”* پوچھو کیا پوچھنا ہے۔
*• قربانی کی بنیادی شرط کیا ہے ؟* میاں ! قرآن میں آتا ہے کہ اللہ کو تمہارا گوشت اور خون نہیں پہنچتا بلکہ تقوی پہنچتا ہے۔ ۔ یاد رکھو! قربانی میں اصل اہمیت تقوی کی ہے گوشت اور خون کی نہیں۔ تقوی کے بنا سارے جانورگوشت اور خون ہیں جو کتنے ہی بڑے اور کتنے ہی قیمتی ہوں لیکن خدا کے نزدیک ان کی کوئی اہمیت نہیں۔ تقوی ہو تو محض ناخن کاٹنے پر ہی خدا قربانی کا اجر دے دیتا ہے اور تقوی نہ ہو تو کروڑوں کی نام نہاد قربانی منہ پر مار دی جاتی ہے ۔
*• حضور تقوی کیا ہے؟* تقوی God Consciousness کا نام ہے۔ یہ خدا کو اپنے تمام معاملات میں شامل کرلینے اور پھر اس کی مرضی کے مطابق عمل کرنے کا نام ہے۔ تقوی اپنی رضا کو خدا کی رضا میں فنا کردینے کا نام ہے۔
*• حضرت مجھے بتائیے کہ میری قربانی میں تقوی شامل ہے یا نہیں؟* ” اچھا یہ بتاؤ کیا قربانی کی تیاری کرلی؟”
*• جی ہاں! ایک گائے خرید کر اپنے گھر باندھ لی ہے۔* میاں یہ تو تم نے جانور خرید کر باندھا ہے ۔ اگر تم نے اپنے اندر کی حرص و ہوس، شہوت، مادہ پرستی،…

ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر ۔۔۔ حصہ- 11

تصویر
ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر حج کی داستان حج کی اصل روح کے تعارف کے ساتھ
تحریر: پروفیسر ڈاکٹر محمد عقیل حصہ-11
شیطانی کیمپ کے مناظر میں کروٹیں بدل رہا تھا ۔ غنودگی اور بیداری کی ملی جلی کیفیت تھی۔ اچانک میں تصور کی آنکھ سے اس جنگ کے مناظر دیکھنے لگا۔ اب منظر بالکل واضح تھا۔ اس طرف اہل ایمان تھے اور دوسری جانب شیطان کا لشکر بھی ڈیرے ڈال چکا تھا۔ شیطانی خیموں کی تعداد بہت زیادہ تھی اور ان میں ایک ہلچل بپا تھی۔ رنگ برنگی روشنیوں سے ماحول میں ایک ہیجان کی کیفیت پیدا کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ باہر پنڈال لگا تھا جہاں بے ہنگم موسیقی کی تھاپ پر شیطانی رقص جاری تھا۔ کچھ نیم برہنہ عورتیں اپنے مکروہ حسن کے جلوے دکھا رہی تھیں۔ ایک طرف شرابوں کی بوتلیں مزین تھیں جنہیں پیش کرنے کے لیے بدشکل خدام پیش پیش تھے۔ اس پنڈال کے ارد گرد شیاطین کے خیمے نصب تھے جو مختلف رنگ اور ڈیزائین کے تھے۔

سب سے پہلا خیمہ شرک و الحاد کا تھا۔ اس خیمے پر ان گنت بتوں کی تصاویر بنی ہوئی تھیں ۔ خیمے میں موجود شیاطین اپنے سردار کے سامنے ماضی کی کارکردگی پیش کررہے تھے کہ کس طرح انہوں نے انسانیت کو شرک و الحاد کی گمراہیوں میں م…

آج کی بات ۔۔۔۔ 27 اگست 2017

تصویر
~!~ آج کی بات ~!~
اپنی عمر سیکھنے اور پڑھنے میں گزار دو کیونکہ انسان کا سب سے بڑا خزانہ اس کا علم ہوتا ہے ، اس کو جتنا مرضی بڑھاتے رہو کیونکہ اس کا کوئی بوجھ نہیں ہوتا۔

"اسلام میں ظاہر اور ضمیر کی اہمیت و تربیت" ... خطبہ جمعہ مسجد نبوی

تصویر
"اسلام میں ظاہر اور ضمیر کی اہمیت و تربیت"  خطبہ جمعہ مسجد نبوی ترجمہ: شفقت الرحمان مغل بشکریہ: اردو مجلس فورم
فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر عبد الباری بن عواض ثبیتی حفظہ اللہ نے مسجد نبوی میں 03-ذو الحجہ- 1438 کا خطبہ جمعہ " اسلام میں ظاہر اور ضمیر کی اہمیت و تربیت" کے عنوان پر ارشاد فرمایا جس میں انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی نے انسان کو ظاہری طور پر خوبرو بنایا ہے تو اسے دل بھی دیا ہے ، اگر اس کا دل اور ضمیر کمال درجے کا بن جائے تو ظاہری خوبصورتی کو کئی چاند لگ جاتے ہیں، لوگ اگرچہ ظاہری خوبصورتی کو اہمیت دیتے ہیں لیکن اللہ تعالی کے ہاں اصل ضمیر اور دل ہے، جس قدر دل کا تعلق اللہ سے مضبوط ہو گا آسمان و زمین میں انسان کی شہرت اور محبت کا نقارہ بجے گا۔ انہوں نے بتلایا کہ قیامت کے دن ظاہر اور ضمیر دونوں کا احتساب ہو گا چنانچہ اسی چیز کو سمجھ کر انسان اپنے ضمیر کی اصلاح ضرور کرتا ہے کیونکہ آخرت میں کامیابی کا دار و مدار قلبی اور باطنی امور پر ہے اگرچہ ظاہری امور کی بھی وہاں بہت اہمیت ہے۔ 
خطبے سے منتخب اقتباس پیش خدمت ہے
تمام تعریفیں اللہ رب العالمین کے لیے ہیں، وہ بہت مہربان اور نہایت …

آج کی بات ۔۔۔ 26 اگست 2017

تصویر
~!~ آج کی بات ~!~
دلچسپی کو طلب مت بننے دو . کیونکہ طلب کی شدت بڑھ کر ضرورت بن جاتی ہے ،  اور ضرورت بڑھ کر کمزوری . پھر وه کمزوری انسان کو بے بسی کی حدود پر لا کھڑا کرتی پے !
خود کو مضبوط رکھو اور الله سے اپنے نفس کی مضبوطی مانگتے رہو. نہ جانے کونسا لمحہ کمزور کر دے . . . ! 

پانچ گیندیں

تصویر
کوکا کولا کمپنی کے مالک برائن ڈائی سن نے کام اور نوکری کی اہمیت بتائی۔ اس نے بولا کہ یہ سمجھو کہ تم ایک گیم کھیل رہے ہو۔ تمہارے پاس ایک وقت میں پانچ گیندیں ہیں۔ ان میں ایک تمہاری نوکری ہے، دوسری فیملی، تیسری تمہارے دوست یار، چوتھی تمہاری روح اور پانچویں تمہاری صحت ہے۔  
تم ایک وقت میں کسی جوکر کی مانند ان سب کو اچھال رہے ہو۔ یاد رکھو کہ ان میں سے صرف تمہاری نوکری ایک ایسی گیند ہےجو ربر کی بنی ہے اور کسی بھی وقت گر بھی پڑے تو نیچے باؤنس کر کے واپس اوپر آجائے گی۔لیکن اس کے علاوہ باقی چاروں گیندیں ایسی ہیں کہ اگر ان میں سے کوئی ایک بھی نیچے گر جائے تو یا تو اس پر نشان رہ جائیں گے یا مکمل طور پر کرچی کرچی ہو جائیں گی۔ باقی چاروں گیندیں کانچ کی ہیں۔ اب تمہیں خیال رکھ کر ان سب کو ہوا میں اچھالتے رہنا ہے۔
اس کی اس بات کا مطلب یہ تھا کہ اپنی روح، صحت، فیملی اور دوستوں کو کسی صورت کھونا نہیں چاہیے۔ جب ہم ان میں سے کسی کو بھی نظر انداز کرتے ہیں تو وہ زندگی بھر کا نقصان ہوتا ہے۔ 
اگر صحت کو نظر انداز کرنے لگیں تو وہ اتنی خراب ہو جاتی ہے کہ بندہ پکا پکا بیمار رہنے لگتا ہے اور صحت کا کوئی نعم البد…

ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر ۔۔۔ حصہ- 10

تصویر
ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر حج کی داستان حج کی اصل روح کے تعارف کے ساتھ
تحریر: پروفیسر ڈاکٹر محمد عقیل حصہ-10
خیمے کی سیر حج کے دن قریب آتے جارہے تھے۔ میں کعبے سے دور تھا لیکن دل وہیں لگا رہتا تھا۔ درمیان میں ایک جمعہ بھی آیا۔ جسے ادا کرنے کے لئے میں شارق اور ریحان کے ساتھ مسجد الحرام روانہ ہوا۔ یہ راستہ ہم نے طریق المشا ہ یعنی پیدل چلنے والوں کے راستے کے ذریعے طے کیا۔ یہ ایک طویل سرنگ تھی جو تقریباً پون گھنٹے پیدل چلنے کے بعد مسجدالحرام پر جاکر ختم ہوتی تھی۔ وہاں پہنچے تو مسجد بھر چکی تھی اور باہر ہی جگہ ملی۔ امام صاحب نے خطبہ دیا اور نماز پڑھائی۔ وہاں میں نے طواف کیا جس میں غیر معمولی رش تھا۔ میں نے حسرت سے ملتزم کو دیکھا جس پر لوگ شہد کی مکھیوں کی طرح چمٹے ہوئے تھے۔ وہاں مجھے مقام ابراہیم بھی نظر آیا ۔ اس کے بارے میں روایت ہے کہ یہ وہ پتھر ہے جس پر کھڑے ہو کر حضرت ابراہیم علیہ السلام نے کعبہ کی تعمیر کی تھی ۔ اس پتھر پر آج بھی ان کے قدموں کے نشان موجود ہیں۔ کچھ لوگ اس کو چومنے کی کوشش کررہے تھےاور شرطے انہیں ہٹا رہے اور سمجھارہے تھے کہ یہ چومنے کی جگہ نہیں صرف دیکھنے کا مقام ہے…

ما گنه کاریم و تو آمرزگار

تصویر
پادشاها جرم ما را در گذار ما گنه کاریم و تو آمرزگار
  اے بادشاہ ہمارے جرم سے در گزر فرما ہم گنہگار ہیں اور تو بخشنے والا
تو نکوکاری و ما بد کرده‌ایم جرم بی‌ پایان و بیحد کرده‌ایم
   تو بھلاٸی کرنے والا اور ہم براٸی کرنے والے ہیں ہم نے بے انتہا اور بے شمار جرم کیے ہیں 
سالها در فسق و عصیان گشته‌ایم آخر از کرده پشیمان گشته‌ایم
برسوں گناہوں اور نافرمانیوں کی قید میں رہے آخر اپنے کیے پر شرمندہ ہیں
دایما در بند عصیان بوده‌ایم هم قرین نفس و شیطان بوده‌ایم
  ہمیشہ گناہ و نافرمانی میں مبتلا رہے نفس اور شیطان کے ساتھی رہے ہیں
روز و شب اندر معاصی بوده‌ایم غافل از یؤخذ نواصی بوده‌ایم
شب و روز گناہوں میں غرق رہے کرنے کاموں اور رکنے کی باتوں سے لاپرواہ رہے
بی گنه نگذشته بر ما ساعتی با حضور دل نکرده طاعتی
 ہماری کوٸی گھڑی گناہ کے ارتکاب کے بغیر نہیں گزری ہم نے صدقِ دل سے فرمانبرداری نہیں کی
بر درآمد بندهٔ بگریخته آب روی خود بعصیان ریخته
 تیرے در پر بھاگا ہوا غلام حاضر ہے گناہوں کے باعث اپنی عزت و آبرو گنوائے ہوئے
مغفرت دارد امید از لطف تو زانکه خود فرمودهٔ لاتقنطوا
   تیری مہر بانی سے مغفرت و بخشش کا امید وار …

تدبر القرآن ۔۔۔ سورہ الکوثر از نعمان علی خان ۔۔۔ حصہ سوم

تصویر
تدبر القرآن سورۃ الکوثر از استاد نعمان علی خان حصہ سوم
فَصَلِّ لِرَبِّكَ "اپنے رب کے سامنے نماز پڑھیں" نارملی نماز "لِ" کے ساتھ نہیں آتی ۔ یہاں "لِ" تعلیل ہے جس کامطلب ہے اپنے رب کے لیے پڑھیں ۔ رب جس نے آپکا خیال رکھا ۔ وہ ابھی بھی آپکی پرواہ کرتا ہے ۔اور اس تکلیف کے موقعے پر جب زیادہ تر لوگ یہ کہنے لگ جاتے ہیں  کہ اللہ نے میرے ساتھ ایسا کیوں کیا؟
تو اللہ تعالی نے ان کی اس بات کے جواب میں یہ "فصل للہ" نہیں کہا۔
"فصل اللہ: اللہ سے مانگیں
اللہ نے کہا
"لربک"
تمہارا رب
وہ جس نے تمہیں چھوڑا نہیں۔
ہر دفعہ جب اللہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو تسلی دیتے ہیں قرآن میں "ربک"  کا استعمال کرتے ہیں ۔جیسے
مَا وَدَّعَكَ رَبُّكَ وَمَا قَلَىٰ یہاں ہم کیا سیکھ رہے ہیں ؟اللہ نے آپکو جو عطا کیا ہے اسکے لیے شکرادا کرنے کا طریقہ کیا ہے ؟آپ اللہ کا شکر نماز کے ذریعے ادا کرتے ہیں ۔ آپ نماز کو ایک فرض کے طور پر دیکھتے ہیں ،پانچ وقتہ تکلیف دہ شیڈول۔
اور رسول اللہ کے لیے یہ ایک ایسی چیز ہے جس میں نہ صرف وہ اپنے غم سے پناہ لیں گے بلکہ ایسا ذ…

آج کی بات ۔۔۔ 24 اگست 2017

تصویر
~!~ آج کی بات ~!~

ﺯﻧﺪﮔﯽ ﺍﻭﺭ ﻗﺴﻤﺖ ﮐﺎ ﭘﺘﺎ ﺍﮔﺮ ﺯﺍﺋﭽﻮﮞ۔۔ﭘﺎﻧﺴﻮﮞ۔۔ ﺍﻋﺪﺍﺩ۔۔ ﻟﮑﯿﺮﻭﮞ ﺍﻭﺭ ﺳﺘﺎﺭﻭﮞ ﺳﮯ ﻟﮕﻨﮯ ﻟﮕﺘﺎ،  ﺗﻮ ﭘﮭﺮ اللہ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﻮ ﻋﻘﻞ ﻧﮧ ﺩﯾﺘﺎ- ﺻﺮﻑ ﯾﮩﯽ ﭼﯿﺰﯾﮟ ﺩﮮ ﮐﺮ ﺩﻧﯿﺎ ﻣﯿﮟ ﺍﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ-
ﺟﺐ ﻣﺴﺘﻘﺒﻞ ﺑﺪﻝ ﻧﮩﯿﮟ ﺳﮑﺘﮯ، ﺗﻮ ﺍﺳﮯ ﺟﺎﻥ کرﮐﯿﺎ ﮐﺮﯾﮟ ﮔﮯ؟ ﺑﮩﺘﺮ ﮨﮯ، ﻏﯿﺐ ﻏﯿﺐ ﮨﯽ ﺭﮨﮯ۔ اللہ ﺳﮯ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺧﺒﺮ ﮐﯽ ﺑﺠﺎﺋﮯ، ﺍﺱ ﮐﺎ ﺭﺣﻢ ﺍﻭﺭ ﮐﺮﻡ ﻣﺎﻧﮕﻨﺎ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﺑﮩﺘﺮ ﮨﮯ!!
ﻋﻤﯿﺮﮦ ﺍﺣﻤﺪ کے ناول ﺁﺏِِ ﺣﯿﺎﺕ سے اقتباس

ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر ۔۔۔ حصہ-9

تصویر
ابلیس سے جنگ کی روداد۔ ۔۔ حج کا سفر حج کی داستان حج کی اصل روح کے تعارف کے ساتھ
تحریر: پروفیسر ڈاکٹر محمد عقیل حصہ-9
عزیزیہ میں شفٹنگ زیارت کے بعد یکم ذی الحج کو ہم حرم کے قریب واقع ہوٹل سے عزیزیہ کے مقام پر شفٹ ہوگئے۔ عزیزیہ کعبے سے پانچ کلومیٹر دور ہے اور اس کے قریب منیٰ اور جمرات واقع ہیں۔ یہ ہوٹل السرایا ایمان کی طرح شاندار تو نہ تھا البتہ صاف ستھرا تھا۔ اسی بلڈنگ میں الخیر گروپ کے لوگ بھی ٹہرے ہوئےتھے۔ اس بلڈنگ میں تبلیغی جماعت کے لوگ آکر بیان دیتے تھے اور ایک مرتبہ سعید انور صاحب نے بھی بیان کیا۔ اس ہوٹل سے کچھ ہی دور مولانا طارق جمیل ، جنید جمشید اور دیگر اہم شخصیات قیام پذیر تھیں۔

اس سے پہلے جس ہوٹل میں قیام تھا وہاں ایک کمرے میں تین افراد ہی مقیم تھے جس کی بنا پر لوگوں سے ملاقات کا کم وقت ملتا تھا۔ لیکن یہاں ایک بڑے سے ہال نما کمرے میں کوئی آٹھ افراد قیام پذیر تھے اور لوگوں سے رابطہ بڑھ گیا۔ یہاں پر شارق، ریحان عابد اور دیگر لوگوں سے بھی دوستی ہوگئی۔ جبکہ میرا دوست آصف بھی برابر والے کمرہ میں مولانا اسلم شیخوپوری کے ہمراہ موجود تھا۔یہاں لدھیانوی ٹریولرز نے تین وقت کا کھانا بھی دی…

اللہ کے نام پر۔۔۔

تصویر
اللہ کے نام پر۔۔۔ افتخار اجمل بھوپال صاحب کا شکریہ سوچ کو بیدار کرنے کے لیے :)
رسول اکرم سیّدنا محمد صلی اللہ علیہ و آلہِ و سلّم کا ارشاد ہے ” تُم میں سے کوئی شخص اس وقت تک کامل مؤمن نہیں بن سکتا جب تک وہ اپنی پسندیدہ چیز اللہ کے راستے میں قربان نہ کرے“۔
ہم تو اللہ کے نام پر دینے کے لیے بچے ہوئے سکے اور پرانے نوٹ رکھتے ہیں کہ کو ئی مانگنے والا ملا تو دے دیں گے ۔۔۔  پرانے کپڑے جن کے یا تو رنگ خراب ہو چکے ہوتے ہیں، یا آؤٹ آف فیشن ہو جاتے ہیں یا جن سے دل بھر جاتا ہے وہ نکال کر الگ رکھ دیتے ہیں (اللہ کے نام پر) کسی ضروررت مند کو دینے کے لیے ۔۔۔  دنیاوی مشاغل میں جو تھوڑا “فارغ وقت” مل جائے تو سوچتے ہیں کہ کچھ اللہ کا ذکر کرلیا جائے یا آج نماز پڑھ لیتے ہیں۔۔۔  ہم تو “بے کار” “پرانی” “فالتو” اور “فارغ” چیزیں نکالتے ہیں اللہ کے لیے اور توقع کرتے ہیں کہ وہ ہمیں بہترین دے (وہ کریم دیتا بھی ہے)۔۔۔ کھلا تضاد نہیں تو اور کیا ہے؟

نبیوں کا حج، آسانیاں اور حجر اسود کا اژدہام! (خطبہ حرم مکی)

تصویر
نبیوں کا حج، آسانیاں اور حجر اسود کا اژدہام! (خطبہ حرم مکی) بمطابق: 21 ذی القعدہ 1438 خطیب: فضیلۃ الشیخ ڈاکٹر ماہر بن حمد المعیقلی  ترجمہ: محمد عاطف الیاس
منتخب اقتباس
الحمد للہ! تعریف اللہ کے لیے ہے، جس نے ہمیں دین اسلام کی ہدایت عطا فرمائی اور ہم پر بیت اللہ کا حج فرض کیا۔ اسی نے حج کو جنت میں داخلے اور گناہوں کے مٹنے کا سبب بنایا۔ میں اللہ پاک کی حمد بجا لاتا ہوں، اسی پر بھروسہ کرتا ہوں اور اسی سے معافی مانگتا ہوں۔ میں ساری بھلائی اسی کی طرف منسوب کرتا ہوں۔ میں گواہی دیتا ہوں کہ اللہ کے سوا کوئی الٰہ نہیں۔ وہ واحد ہے۔ اس کا کوئی شریک نہیں۔ میں یہ بھی گواہی دیتا ہوں کہ ہمارے نبی محمد صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم اللہ کے بندے اور رسول ہیں۔ اللہ کی رحمتیں ہوں آپ صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم ، آپ صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم کی آل پر، آپ صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم کے صحابہ کرام پر اور قیامت تک ان کے پیروکاروں پر۔
بعدازاں! اے مسلمانو!
میں اپنے آپ کو اور آپ سب کو اللہ تعالیٰ سے ڈرنے کی تلقین کرتا ہوں۔ خوفِ خدا ہی بہترین ہتھیار، عمدہ ترین اثاثہ اور قیامت کے لیے بہترین سرمایہ ہے۔ فرمانِ باری تعالیٰ ہے:
’’سف…

زمرہ جات

رمضان غزلیں امید سوئے حرم سورہ البقرہ دعا سفرِ حج استقبال رمضان، ایمان، میرے الفاظ خطبہ مسجد نبوی میری شاعری پاکستان شاعری یاد حرم لبیک اللھم لبیک محبت خلاصہ قرآن سفرنامہ صراط مستقیم شکر اچھی بات، نعت رسول مقبول توبہ حج 2015 حج 2017 حمد باری تعالٰی خوشی #WhoIsMuhammad سورۃ الکہف ملی ترانے نمل استغفار توکل سفر مدینہ سورہ الرحمٰن پیغامِ حدیث، کچھ دل سے حکمت کی باتیں دوستی سورہ الکوثر سورہ الکھف علامہ اقبال علم 9نومبر آزادی باغبانی عید مبارک فارسی اشعار، قائد اعظم قرآن کہانی معلومات یوم دفاع آبِ حیات جنت خطبہ حجتہ الوداع خطبہ مسجد الحرام رومی، زیارات مکہ سورۃ الناس شکریہ قربانی محمد، محمد، سوشل میڈیا، نیا سال، 2017 پیغام اقبال یوم پاکستان 11-12-13 16December2014 APS اردو محاورہ جات بارش تقدیر جنت کے پتے حج 2016 حیا، ذرا مسکرائیے سورج گرہن 2015 سورہ العلق، سورہ المؤمنون سورۃ العصر سورۃ الفاتحہ، طنز و مزاح عاطف سعید عورت قرآن لیس منا ماں مسدس حالی مصحف موسیقی نمرہ احمد والد یوم خواتین، عورت
اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل