سکھ سندیسہ (میرے الفاظ)

~!~ سکھ سندیسہ ~!~

جب ڈھیر اداسی گھیرے تو، اک سکھ سندیسہ آئے
مشکل سے جب میں تھک جاؤں، کچھ غیب سے حل ہو جائے
میرے گمان سے پرے کہیں سے ،حوصلہ یوں مل جائے
جیسے کہ گھور اندھیرے میں، کوئی آس کا دیپ جلائے
میری آس کو نہ وہ ٹوٹنے دے جو ہے اس جگ کا والی
میری ہر دم وہ امداد کرے، اس کی ہر شان نرالی
سیما آفتاب :)

تبصرے

ایک تبصرہ شائع کریں

زیادہ دیکھی گئی تحاریر

آٹھ مصیبتیں

ہم خوشحال زندگی کیسے گزار سکتے ہیں؟

دوستی ۔۔۔ میری ایک شعری کاوش

زمرہ جات

اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل