ہفتہ, جنوری 28, 2017

سکھ سندیسہ (میرے الفاظ)

~!~ سکھ سندیسہ ~!~

جب ڈھیر اداسی گھیرے تو، اک سکھ سندیسہ آئے
مشکل سے جب میں تھک جاؤں، کچھ غیب سے حل ہو جائے
میرے گمان سے پرے کہیں سے ،حوصلہ یوں مل جائے
جیسے کہ گھور اندھیرے میں، کوئی آس کا دیپ جلائے
میری آس کو نہ وہ ٹوٹنے دے جو ہے اس جگ کا والی
میری ہر دم وہ امداد کرے، اس کی ہر شان نرالی
سیما آفتاب :)

2 تبصرے: