کوشش کریں کہ سورج بن کر روشنی سب تک پہنچائیں۔۔۔اگر ایسا نہیں کرسکتے تو چاند بن کر سورج کی روشنی کو منعکس کریں تاکہ پھیلی ہوئی تاریکی کم کرنے میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔۔ یہ بلاگ اس ‘عکاسی‘ کی ہی ایک چھوٹی سی کوشش ہے----خوش رہیں

سمندر رازداں میرا اگر ہوتا


سمندر رازداں میرا اگر ہوتا
تو سب تنہائیاں اپنی اسے میں سونپ دیتا
اور چلتا تھام کر انگلی ہوا کی
دور جاتے راستوں پر
جن سے کوئی لوٹ کر آتا نہیں
سمندر رازداں میرا اگر ہوتا
تو سن گہرائیاں اپنی اسے میں سونپ دیتا
اور اترتا
پانیوں کی نیلگوں وسعت کے سینے میں
زمیں کشتی بنا کر
آسماں کو بادباں کرتا
سفر کا دکھ بھرا لمحہ
تمہارے اور اپنے درمیں کرتا
سمندر رازداں میرا اگر ہوتا

نصیر احمد ناصر

تبصرے

حالیہ تبصرے

زیادہ دیکھی گئی تحاریر

دوستی ۔۔۔ میری ایک شعری کاوش

کمال یہ ہے

انتخابِ کلام مسدس حالی