جمعہ, جنوری 04, 2013

Tumhain Jab Sochta hoon


تمہیں جب سو چتا ہو ں۔۔۔۔۔۔۔

تمہیں جب سو چتا ہو ں۔۔۔۔۔۔۔
کس قدر مو سم بد لتے ہیں۔۔۔۔۔
خز ا ں کی رُ ت میں بھی لگتا ھے۔۔۔۔۔۔
فصل گُل مہکتی ہو۔۔۔۔۔
ا گر ہوں گرمیا ں ۔۔۔۔۔
آ نگن میں سرما ر نگ بدلے۔۔۔۔۔۔۔
جھا نکتی ھے اک گُلا بی شال سی اُ و ڑھے۔۔۔۔۔۔۔
ا چا نک با ر شو ں کے سلسلے ہو تے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔
سب کچھ بھیگ جا تا ھے ۔۔۔۔۔۔
کبھی لگتا ھے ا ندر بھی ھے جل تھل سب۔۔۔۔۔۔
کبھی باہر لق و د ق د شت۔۔۔۔۔۔
سا پھیلا ہو ا ملتا ھے آ نکھوں کو۔۔۔۔۔۔۔۔
کبھی ہر سمت سنا ٹے میں۔۔۔۔۔
جیسے ہُو کا عالم ہو۔۔۔۔۔
کبھی ا طراف میں جلتے ہیں لا کھو ں قمقمے ہر سُو۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کبھی بجلی چمک اُ ٹھتی ھے ۔۔۔۔۔۔

میر ے ذ ہن کے گو شو ں میں ہو تا ھے چرا غا ں سا۔۔۔۔۔۔
اُسی میں و ہ د ر خشاں ما ہ رو۔۔۔۔۔۔
مثل گُل د ل دہکتا ھے

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں