اللہ کرم اللہ کرم​


حاضر ہیں تیرے دربار میں ہم اللہ کرم اللہ کرم​
دیتی ہے صدا یہ چشم نم اللہ کرم اللہ کرم​

ہیبت سے ہر اک گردن خم ہے ہر آنکھ ندامت غم ہے​
ہر چہرے پہ ہے اشکوں سے رقم اللہ کرم اللہ کرم​

جن لوگوں پہ ہے انعام تیرا ان لوگوں میں لکھ دے نام میرا​
محشر میں رہ جائے بھرم اللہ کرم اللہ کرم​

ہر سال طلب فرما مجھ کو، ہر سال یہ شہر دکھا مجھ کو
ہر سال کروں میں طوفِ حرم ، اللہ کرم اللہ کرم

تبصرے

زیادہ دیکھی گئی تحاریر

تدبرِ القرآن.... سورہ الکھف..... استاد نعمان علی خان...... حصہ-10

دوستی ۔۔۔ میری ایک شعری کاوش

آٹھ مصیبتیں

زمرہ جات

اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل