بدھ, مارچ 20, 2013

Mere Hamsafar, Mere hamnasheen




میرے ہمسفر میرےہمنشیں
میں نے رب سے مانگا تو کچھ نہیں
میں نے جب بھی مانگی کوئی دعا
نہیں مانگا کچھ بھی تیرےسوا
یہ طلب کیا کے میرے خدا
سبھی راحتیں
سبھی چاہتیں
وہ عطا کرے تجھے منزلیں
یہ طلب کیا کے میرے خدا
تجھے بخت دے
تجھے تاج دے
تجھے تخت دے
میرے ہمسفر
میرے چارہ گر
یہ ہے دوستی کا کٹھن سفر
میرے ساتھ چلنا ذرا سوچ کر
ذرا دیکھ تو میرا حوصلہ
میرے پاس جو بھی وہ ہے تیرا
نہیں اور کچھ بھی تیرے سوا
میری دوستی
میری زندگی
میری خامو شی
میرے بے بسی
میرا علم بھی
میرا نام بھی
کہ میری صبح بھی
کہ میری شام بھی
کہ جو مل سکیں میرے دام بھی
وہ سبھی کچھ تجھے عطا کرے
میرے چارہ گر تو یقیں تو کر
مجھے مانگنا تو نہ آسکا
میں نے پھر بھی مانگی یہی دعا
کہ گواہی دے گا میرا خدا
میں نے جب بھی اس سے طلب کیا
نہیں مانگا کچھ بھی تیرے سوا

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں