منگل, جون 18, 2013

Sach

اپنی روز مرہ کی زندگی میں سے جھوٹ کو ایسے نکا لو جیسے تم کائنات میں سے شیطان کو نکا ل رہے ہو ،اپ جھوٹ کو مکمل طور پر چھوڑ دو ..چھوٹے چھوٹے جھوٹ بھی چھوڑ دو تاکہ تمہاری زندگی میں سچ داخل ہو جائے،،اور جب سچ داخل ہو جائے گا تو زندگی خود بخود سچ میں ڈھلتی چلی جائے گی ..اگر حق بیان کرنا پڑے تو اپ کو صداقت کے بیان میں تذبذب نہ آئے.صد ا قت کا مطلب ہے جھوٹ کو برملا جھوٹ کہو اور سچ کو بر ملا سچ کہو اور نہ سمجھ انے والی بات کو برملا نہ سمجھنے والی بات کہو …..تذبذب میں نہ پڑنا ورنہ یہ تلوار کی دھار ثابت ہو گا اور آپ کو گرا دے گا ” اس طرح آپ کا سفر نہیں ہو گا

واصف علی واصف

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں