پیر, فروری 25, 2013

Mohabbat Dukh To Deti Hai


محبت دکھ تو دیتی ہے
مگر اک بات کہنی ہے
کہ جس کو چاہا جاتا ھے
ضروری یہ نہیں ہوتا کہ
اس کو پا لیا جائے

کبھی اس کے بچھڑنے سے
محبت کم نہیں ہوتی

ذرا سی دیر پہلے تو
یہی احساس ہوتا ہے، کہ
کوئی جی نہیں سکتا
مگر پھر رفتہ رفتہ ہی
حقیقت کھُلتی جاتی ہے

محبت وہ نہیں ہوتی
کہ جس کو پا لیا جائے

محبت وہ بھی ہوتی ہے
جو ہمیشہ ساتھ رہتی ہے
کبھی دکھ کے اندھیروں میں
کبھی خوشیوں کے دامن میں

کبھی وہ آس دیتی ہے
کبھی امید دیتی ہے

Mohhabat Dukh To Deti Hai,,
Magar Ik Baat Kehni Hai,,
Ke Jisko Chaha Jata Hai,,
Zarori Ye Nahi Hota Ke,,
Usko Pa Liya Jaey,,

Kabhi Us Ke Bicharne Se,,
Mohabbat Kam Nahi Hoti,,

Zara Si Dair Pahle To,,
Yehi Ehsaas Hota Hay,,Ke
Koi Ji Nahi Sakta,,
Maggar Phir Rafta Rafta Hi,,
Haqiqat Khulti Jati Hai,,

Mohabbat Wo Nahi Hoti,,
K Jisko Pa Liya Jaey,,

Mohabbat Wo Bhi Hoti Hay,,
Jo Hamesha Sath Rahti Hay,,
Kabhi Dukh Ke Andheron Main,,
Kabhi Khushion Ke Daman Main,,

Kabhi Woh Aas Deti Hai
Kabhi Umeed Deti Hai.

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں