خود پر رویا کرو!


كيا تم جانتے ہو تمہيں كب اپنے آپ پر رونا چاہيے؟

جب تم برائى كو ديکھو اور اسکو برا نہ سمجھو، اور جب تم نیکی کو دیکھو تو اسکو حقير جانو
خود پر رویا کرو!
جب تمہاری نماز عبادت سے عادت میں بدل جائے اور راحت کے لمحے سے بد بختى میں۔
خود پر رویا کرو!
اگر اپنے اندر گناہوں کی قبولیت دیکھو اور اس ذات سے مقابلے کی چاہت ديكهو جو تمام غيب كى باتوں كو جاننے والی ہے۔
خود پر رویا کرو!
جب تم عبادت کی لذت محسوس نہ كرسكو اور نہ ہى اطاعت كا لطف۔
خود پر رویا کرو!
جب تم بهر جاتے ہو غموں سے اور تم ڈوب جاتے ہو تفكرات ميں حالانكہ تمہارے اختيار ميں ہے آخر تہائى رات (كى بهلائيوں كو پانا)۔
خود پر رویا کرو!
جب اپنے وقت کو ایسے کام میں برباد کرتےہو جو مفید نہ ہو حالانکہ تم جانتے ہو کہ تمہارا حساب ليا جائےگا پهـر بهى تم غفلت ميں مبتلا ہو۔
خو د پر رویا کرو!
جب تمہاری آنکھ کسی فلم کے مؤثر منظر پر تو آنسو بہاتی ہو ليكن وه قران کریم کی سماعت سے متاثر نہ ہو۔
خود پر رویا کرو!
جب تم زوال پزیر دنیا کے پیچھے تو بھاگنے لگو ليكن الله كى اطاعت میں، کسی سے آگے نکلنے کی کوشش نہ كرو۔
خود پر رویا کرو!
جب تم جان لو کہ تم نے غلط راه اپنا ركهی ہے اور جبکہ کثير عمر تو گزر چکی ہے۔
خود پر رویا کرو!
خوف رکھنے والے کے رونے کی طرح...توبہ كرنے والے...رجوع کرنے والے...اپنے مولا کی رحمت كے امیدوار کے رونے کی طرح۔
اور تم جانتے ہو کہ توبہ كا دروازه كھلا ہوا ہے جب تک روح حلق تک نہيں پہنچ جاتی. 
رویا کرو شاید یہ رونا روح میں سے سکون کو متحرك كر (كے نكال) دے اور دل میں سے غفلت كو اور شايد اسى آنسو ميں رجوع ہو.
 
(منقول) 

تبصرے

زیادہ دیکھی گئی تحاریر

آٹھ مصیبتیں

ہم خوشحال زندگی کیسے گزار سکتے ہیں؟

دوستی ۔۔۔ میری ایک شعری کاوش

زمرہ جات

اور دکھائیں

سبسکرائب بذریعہ ای میل